.

بورکینا فاسو میں فوج اورعسکریت پسندوں میں خون ریز تصادم، 80 دہشت گرد ہلاک

لڑائی میں سات فوجی بھی ہلاک ہوگئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افریقی ملک بورکینا فاسو کے شمالی علاقے اربیندا میں فوج اورعسکریت پسند گروپ کے درمیان ہونے والی لڑائی میں سات فوجی، متعدد عام شہری جب کہ 80 دہشت گرد ہلاک ہوگئے ہیں۔

بورکینا فاسو کی فوج کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ریاست سوم میں اربیندا کے مقام پر دہشت گردوں نے فوجیوں پرحملہ کردیا جس کے جواب میں فوج نے بھرپور کارروائی کرکے کم سے کم 80 دہشت گردوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

لڑائی میں متعدد عام شہری بھی جاں بحق اور زخمی ہوئے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ سات فوجی ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے۔

فوج نے عسکریت پسندوں کے قبضے سے ایک سو موٹرسائیکلیں، بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی قبضے میں لے لیا۔ فوج نے دہشت گردوں کا تعاقب جاری رکھا ہوا ہے اور بری فوج کو فضائیہ کی مدد بھی حاصل ہے۔

قبل ازیں بورکینا فاسو فوج نے 16 دسمبرکو چار دہشت گردوں کو شمالی علاقے بیلھورو میں ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

نومبر میں بورکینا فاسو کے سیکیورٹی حکام نے مختلف کارروائیوں میں سو سے زاید عسکریت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا تاہم آزاد ذرائع سے ان ہلاکتوں کی تصدیق نہیں ہوسکی۔