طالبان کا افغان نیشنل آرمی کی چیک پوسٹ پر حملہ، 10 اہلکار ہلاک

حملہ آور زیر زمین خندق کھود کر چیک پوسٹ تک پہنچے اور حملے سے قبل دھماکے کر کے فرار ہو گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

افغانستان میں صوبہ ہلمند کے ضلع سنگین میں طالبان نے افغان نیشنل آرمی کی چیک پوسٹ پر حملہ کیا ہے۔ افغان پولیس کے مطابق طالبان حملے میں 10 افغان آرمی کے اہلکار ہلاک ہو گئے۔ چیک پوسٹ پر 16 اہلکار تعینات تھے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق حملہ آور زیر زمین خندق کھود کر چیک پوسٹ تک پہنچے اور حملے سے قبل دھماکے کیے۔طالبان حملے کے بعد فرار ہوگئے ہیں۔ پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا ہے اور چند مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لیا گیا ۔

خیال رہے رواں ہفتے کے آغاز پر منگل کے روز بھی طالبان کے حملے میں افغان نیشنل آرمی کے سات فوجی ہلاک ہو گئے تھے۔ بعد ازاں 26 دسمبر کو بھی طالبان کے حملے میں چھ فوجی اہلکار ماے گئے تھے۔اس ہفتے طالبان کا افغان فوجی اہلکاروں پر یہ تیسرا حملہ ہے اور ان حملوں میں کم سے کم 20 فوجی مارے جا چکے ہیں۔

رواں ہفتے طالبان کے حملوں میں افغان فوج کے 10 فوجی اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں۔

ادھر دوسری جانب افغانستان کے جنوب مشرقی صوبے غزنی میں طالبان کی ایک جیل میں سے آٹھ قیدی فرار ہو گئے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق افغان وزارت دفاع نے ایک بیان میں کہا کہ طالبان کے قید خانے سے فرار ہونے والے افراد سکیورٹی فورسز کے اہلکار ہیں۔

افغان فورسز کے یہ اہلکار فرار ہونے کے بعد ایک فوجی اڈے پر پہنچ گئے۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ان اہلکار کو طالبان نے کتنے عرصے تک قید میں رکھا تھا۔ گزشتہ چند برسوں میں افغان اسپیشل فورسز نے طالبان کے قبضے سے اپنے متعدد فوجیوں کو آزاد کرایا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں