.

سال 2020ء میں سفر اور 'ٹور پلاننگ' کے لیے ایشیا کے10 سستے شہر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فضائی سفر کی 'الفا ٹریول انشورنس' کمپنی کی طرف سے جاری کردہ ایک نئی رپورٹ میں سال 2020ء کے دوران ایشیا کے 10 شہروں کی تفصیلات بیان کی گئی ہیں۔ ان میں سر فہرست ویت نام کا شہر' ہنوئی' ہے جو رواں سال کے سیاحتی سفر کے لیے سب سے سستا قرار دیا گیا ہے۔

اس مطالعے کے مطابق ھانوئی کو کھانے پینے ، ہوٹلوں اور سیاحوں کی دلچسپی اور اشیائے صرف کی قیمتوں کے حوالےسے ایشیا کا سستا ترین شہر قرار دیا گیا ہے۔ اس حوالے سے رپورٹ برطانوی اخبار'دا میرر' میں شائع ہوئی ہے جو العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطالعے سے بھی گذری اور اسے العربیہ ڈاٹ نیٹ کے قارئین کے لیے پیش کیا جا رہا ہے۔

ایشیا کے سستے شہروں کے مطالعے کے دوران 30 شہر نامزد کیے گئے۔ ان میں ایک رات کے ہوٹل میں قیام و طعام، نقل وحمل کے اخراجات، تین کے اوقات کا کھانا، مشروبات، اور شہر کے پرکشش مقامات کی تفصیلات شامل کی گئی ہیں۔ اگرچہ ہنوئی ہرلحاذ سے سستا شہر نہیں مگر یہاں سفر کرکے آنے والے افراد یومیہ 18 اعشاریہ چھ ڈالر میں ایک دن بیتا سکتےہیں۔

لائوس کا شہر وینٹن ایشیا کا دوسرا سستا شہر ہے جہاں آپ ان دن کم سے کم 19 اعشاریہ 24 ڈالر میں گذارہ کرسکتےہیں۔

ایشیا کے مہنگے شہروں میں سری لنکا کا کولمبو جہاں کسی ہوٹل میں ایک رات کےقیام کے کم سے کم چارجز 23 اعشاریہ 52 ڈالر یا پاکستانی ساڑھے تین ہزار روپے ہوسکتے ہیں۔

درج ذیل ایشیا کے سستے شہروں اور ان میں قیام کے ایک رات کے نرخ کی تفصیل کچھ یوں ہے۔ ویتنام کا ہنوئی 18.6 ڈالر، لائوسکا وینیٹن 19.24، ویتنام کا چی ہوچی منہ 19.81 ڈالر ، میانمار کا ینگون 20.43 ڈالر،نیپال کا بخارا 20.56 ڈالر ویتنام کا 'ھوی آن' 51.57 ڈالر، تھائی لینڈ کا چیانگ مائی 21.75 ڈالر، بھارت کا دہلی 22.56 ڈالر ، کمبوڈیا کا فین نوم پینہ 22.56 اور کولمبو 23.52 ڈالر ایک رات کے قیام کے اخراجات کے ساتھ دسواں سستا شہر ہے۔