.

گوئٹے مالا کے بعد ہونڈراس نے بھی حزب اللہ کو دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وسطی امریکا کے ملک ہونڈراس نے ایران کی حمایت یافتہ لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔

ہونڈراس کے سکیورٹی کے نائب وزیر نے سوموار کو حکومت کے اس فیصلے کا اعلان کیا ہے۔قبل ازیں آج ہی ملک کے صدر ژواں اورلینڈو ہرنانینڈیز نے ٹویٹر پر یہ اعلان کیا تھا کہ ہونڈراس سرکاری طور پر حزب اللہ کو ایک دہشت گرد تنظیم قراردے دے گا۔

ہونڈراس کے ہمسایہ ملک گوئٹے مالا نے گذشتہ ہفتے حزب اللہ کو ایک دہشت گرد گروپ قرار دے دیا تھا۔

یادرہے کہ حزب اللہ ایران کی مالی، عسکری اور فنی معاونت سے 1982ء میں قائم کی گئی تھی۔ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب نے لبنان میں خانہ جنگی کے برسوں میں حزب اللہ کو رقوم مہیا کی تھیں اور اس کے جنگجوؤں کو عسکری تربیت دی تھی۔یہ تب سے ایران کی ایک آلہ کار تنظیم کے طور پر کام کررہی ہے۔اس کو امریکا ، برطانیہ اور عرب لیگ کے رکن ممالک نے بھی ایک دہشت گرد تنظیم قرار دے رکھا ہے۔

اس تنظیم کے سربراہ حسن نصراللہ ہیں۔ وہ 1992ء سے حزب اللہ کے سیکریٹری جنرل چلے آرہے ہیں۔ تب ان کے پیش رو کو اسرائیلی فورسز نے قتل کردیا تھا۔ انھوں نے ملیشیا کا سربراہ بننے کے بعد سے ایران کے رہبرِ اعلیِ آیت اللہ علی خامنہ ای کے زیر قیادت ایران کے ساتھ قریبی تعلقات استوار رکھے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں