.

شام میں باغیوں کے تشدد سے متاثرہ امریکی صحافی کا قطری بنک کے خلاف مقدمہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں سخت گیر باغی گروپوں کے تشدد سے متاثرہ امریکی فوٹو جرنلسٹ میتھیو شرائیر نے قطرکے اسلامی بنک کے خلاف ہرجانے کا مقدمہ دائر کردیا ہے۔انھوں نے قطری بنک پر شام کے باغیوں کو مختلف طریقوں سے مالی امداد مہیا کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔

میتھیو کو شام میں باغیوں نے جنوری 2013ء میں اغوا کر لیا تھا۔انھیں سات ماہ تک زیر حراست رکھا تھا، اس دوران میں انھیں ذہنی اذیتیں دی تھیں اور جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔

انھوں نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ انھیں شام میں القاعدہ سے وابستہ جنگجو گروپ النصرہ محاذ اور باغی گروپ احرارالشام نے اغوا کیا اور تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔انھوں نے قطری بنک پر ان دونوں تنظیموں کو عطیات کی شکل میں قریباً ایک لاکھ 37 ہزار ڈالر کی رقم مہیا کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔اس کے علاوہ اس بنک نے الکعبی نامی ایک شخص کو اپنے ایک کم سن بیٹے کا نام پر اکاؤنٹ کھولنے کی بھی اجازت دی تھی۔ نیزاس نے’’اہل الشام‘‘ کے لیے سوشل میڈیاپرعطیات جمع کرنے کے لیے’’مدد‘‘ کے نام سے مہم چلائی تھی۔

شرائر نے مزید بتایا ہے کہ’’الکعبی اور اس کے ساتھیوں نے النصرہ محاذ کے لیے نہ صرف قطر بلکہ پورے مشرقِ وسطیٰ میں سوشل میڈیا پر مہم چلائی تھی۔ٹویٹر ، وٹس ایپ ، یوٹیوب اور فیس بُک پر امداد کے لیے پوسٹ کی گئی تحریروں میں قطر اسلامی بنک کا نام اور اکاؤنٹ نمبر دیا جاتا تھا۔‘‘

انھوں نے 13 جنوری کو امریکی ریاست فلوریڈا کے جنوبی ضلع کی ڈسٹرکٹ کورٹ میں قطر اسلامی بنک کے خلاف ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا تھا۔انھوں نے اس میں شامی باغیوں کے تشدد سے پہنچنے والے جسمانی نقصان کے ازالے کے لیے ہرجانہ،وکیل کی فیس اور تمام عدالتی کارروائی کے اخراجات ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔قطری اسلامی بنک نے اس حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے۔

امریکی صحافی کا کہنا ہے کہ انھوں نے شام میں اغوا کے وقت نارنجی رنگ کا جمپ سوٹ پہن رکھا تھا۔شامی باغیوں نے ان پر امریکا کی سنٹرل انٹیلی جنس ایجنسی ( سی آئی اے) کا ایجنٹ ہونے کا الزام عاید کیا تھااور انھیں تشدد کا نشانہ بناتے رہے تھے کہ وہ اس کا اقرار کریں۔

وہ جولائی 2013ء میں شامی باغیوں کے چنگل سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تھے۔ان کے فرار میں بعض شامی باغیوں ہی نے مدد کی تھی اور ترکی کی سرحد تک پہنچایا تھا۔پھر وہاں سے وہ امریکا واپس پہنچنے میں کامیاب ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں