.

عراق: مقبول شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر کی امریکا مخالف مظاہروں کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے مقبول شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر نے اتوار کو بغداد میں امریکی سفارت خانے کے خلاف اور دوسرے شہروں میں مظاہروں کی اپیل کی ہے۔

ان کے دفتر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ان مظاہروں میں قوم کی علامت کو نقصان پہنچانے والوں کی مذمت کی جائے گی۔‘‘

مقتدیٰ الصدر نے دوروز پہلے حکومت مخالف احتجاجی تحریک کی حمایت سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیا تھا۔ اس کے بعد اس خدشے کا اظہار کیا جارہا ہے کہ سکیورٹی فورسز مظاہرین کے خلاف ایک مرتبہ پھر خونیں کریک ڈاؤن کرسکتی ہیں۔

مقتدیٰ الصدرمظاہرین کے عراق کی بدعنوانیوں اشرافیہ کو ہٹانے کو مطالبے کی حمایت کرتے رہے ہیں لیکن انھوں نے اپنے تمام حامیوں کو ان مظاہروں میں بہ طور جماعت شرکت کی ہدایت نہیں کی تھی۔ البتہ ان کے بہت سے حامی ذاتی طور پر ان مظاہروں میں شرکت کررہے تھے اور وہ اپنے قائد کے اعلان کے بعد جمعہ کی شب احتجاجی دھرنے سے واپس چلے گئے تھے۔