.

چین میں کرونا وائرس نے 304 جانیں نگل لیں، 14 ہزار سے زاید متاثر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چینی حکام نے بتایا ہے کہ ملک میں نئے کرونا وائرس کی وجہ سے ہونے والی تصدیق شدہ اموات کی تعداد 304 ہوگئی ہے۔ گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران صوبہ ھوبی میں اس مہلک وائرس کے نتیجے میں مزید 45 افراد جان کی بازی ہار گئے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صوبہ ہوبی کے ہیلتھ کمیشن کے ذریعہ شائع ہونے والے تفصیلات سے ظاہر ہوا ہے کہ وبا پھیلنے مزید میں تیزی آئی ہے۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں 1921 نئے کرونا متاثرین کی نشاندہی کی گئی ہے جس کے بعد اس مہلک وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 14 ہزار 380 تک جا پہنچی ہے۔

خیال کیا جاتا ہے کہ یہ کرونا وائرس پہلی بار چین کے صوبہ ھوبی کے ووہان شہرکی ایک مارکیٹ میں ظاہر ہوا جہاں جنگلی جانور فروخت ہوتے ہیں۔ نئی سال کی تعطیلات کی وجہ سے اس کے پھیلائو میں اس لیے بھی اضافہ ہوا کہ چینیوں کی بڑی تعداد چھٹیاں منانے کے لیے اندرون اور بیرون ملک سفر کرتے ہیں۔

چین نے اس وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لیے سخت اقدامات اٹھائے جن میں ووہان اور اس کے گردونواح صوبہ ہوبی میں 50 ملین سے زائد افراد کو الگ تھلگ کردیا گیا ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے اس وائرس کی وجہ سے بین الاقوامی "ہنگامی حالت" نافذ کی ہے جب کہ کئی ممالک نے چین کے لیے اپنے شہریوں کی آمدو رفت روک دی ہے۔

چین سے باہر وبائی بیماری سے متاثرہ ممالک کی تعداد 20 سے زیادہ ہوگئی ہے۔

چین سے مراکشی شہریوں کا انخلاء

افریقی عرب ملک مراکش نے کرونا زدہ چینی شہر ووہان سے اپنے شہریوں کو واپس لانے کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔
ایک پریس ریلیز میں مراکشی وزارت صحت نےکہا ہے کہ متاثرہ شہریوں کی مدد کے لیے سویلین اور ملٹری ڈاکٹروں اور نرسوں کی ایک ٹیم مختص کرنے کا اعلان کیا۔

چینی صوبے ووہان سے واپس آنے والے مراکشی شہریوں کو پہلے رباط کے فوجی اسپتال اور وسطی شہر میکناس کے ایک اور اسپتال میں داخل کیا جائے گا۔
چینی صوبے ووہان سےواپس آنے والے مراکشی شہریوں کو کم سے کم 20 دن تک اسپتال میں رکھا جائے تاکہ اس امر کی یقین دہانی کرائی جاسکے کہ وہ کرونا سے متاثر نہیں ہوئے ہیں۔

دریں اثناء روس نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ اس نے کرونا وائرس کے پھیلنے پر قابو پانے میں مدد کے لیے چین کے بغیر ویزا کے سیاحوں کا سفر معطل کردیا ہے۔
روسی حکومت کے ایک حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ دونوں ملکوں میں سنہ 2000ء میں طے پائے بغیرویزہ سیاحت کے پروگرام کومعطل کردیا جائے گا۔
روس چینی شہریوں کی لیے ورک ویزا حاصل کرنے کی دستاویزات کو عارضی طور پر قبول کرنا اور جاری کرنا بھی بند کردے گ

مقبول خبریں اہم خبریں