.

برطانیہ میں معذور شخص پر بہیمانہ تشدد کی ویڈیو وائرل

خاتون کوغلط پارکنگ سے روکنے پر معذور کو شوہر سے پٹوایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ میں ذرائع ابلاغ میں ایک معذور شخص کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے المناک واقعے کی ویڈٰیو نشر کی گئی ہے۔

برطانوی اخبار انڈی پنڈنٹ نے معذور شخص کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کی تفصیلی رپورٹ شائع کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ وہیل چیئرپرموجود ایک شخص نے معذور افراد کی پارکنگ میں کار پارک کرنے سے روکا اور صرف اتنا کہا کہ یہ جگہ معذور افراد کی پارکنگ کے لیے مختص ہے۔ اس پر خاتون طیش میں آئی اور اس نے اس کی شکایت اپنے شوہر سے کی۔

برطانوی اخبار سے بات کرتے ہوئے تشدد کا شکار معذور شخص نے بتایا کہ اسے صرف اتنی سی بات پر مارا پیٹا گیا اس نے خاتون کو معذوروں کی پارکنگ کے لیے مختص جگہ پر کار کھڑی نہ کرنے کا مشورہ دیا تھا۔ اس نے بتایا اس شخص نے مجھے وہیل چیئرسے اٹھا کرزمین پر پٹخ دیا اور لاتوں اور گھونسوں سے اتنا تشدد کیا کہ مجھے ایسے لگا کہ میری موت واقع ہونے والی ہے۔

معذور شہری کا کہنا تھا کہ مجھے صرف اس لیے تشدد کا نشانہ بنایا گیا کہ میں نے خاتون کو غلط جگہ پر پارکنگ نہ کرنے کا مشورہ دیا تھا۔ خاتون کو میری اتنی بات ناگوار گذری اور اس نے اپنے شوہر کو میری شکایت کی۔ اس کا شوہر میرا تعاقب کرتے ہوئے کاروباری مرکز میں پہنچا اور مجھے کہا کہ میری اہلیہ سے معافی مانگو۔ اس کے بعد اس نے میری کرسی الٹ دی اور مجھے زمین پر پٹخ دیا۔

معذور شخص پر تشدد کی ویڈیو کا دورانیہ 90 سیکنڈ ہے تاہم اس واقعے نے عوامی اور سماجی حلقوں میں سخت وغصے کی لہر دوڑا دی ہے۔

موقعے پرموجود عینی شاہدین نے برطانوی اخبار کو بتایا کہ ایک معذور شخص کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنانا ناقابل قبول ہے۔ پولیس نے حملہ آور کی شناخت کے بعد حراست میں لیا جسے بعد ازاں ایک لاکھ 80 ہزار ڈالر ضمانت پر رہا کیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ اس طرح کا ایک واقعہ 11 جنوری کو امریکی ریاست کیلیفورنیا میں بھی پیش آیا تھا۔