.

استنبول:طیارہ اترتے ہوئے رن وے سے پھسل کرتین حصوں میں بٹ گیا،تین مسافر ہلاک ،179 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے سب سے بڑے شہر استنبول کے صبیحہ گوکچین ہوائی اڈے پر ایک مسافر طیارہ رن وے سے پھسل کر پھر تین حصوں میں بٹ گیا ہے۔ترک حکام کا کہنا ہے کہ اس حادثے میں تین مسافر ہلاک اور ایک سو اناسی زخمی ہوگئے ہیں۔

ترکی کے وزیر صحت فخرالدین کوکا نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ بعض زخمی مسافروں کو تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا تھا اور ان میں تین دم توڑ گئے ہیں۔

حادثے کا شکار ہونے والا مسافر طیارہ بوئنگ 737-86 جے تھا۔یہ طیارہ پیگاجس ائیرلائنز کا ملکیتی ہے اور یہ ازمیر شہر سے استنبول آیا تھا۔ترکی کی ٹرانسپورٹ کی وزارت کے مطابق طیارے میں 177 مسافر اور عملہ کے چھے ارکان سوار تھے۔اس طرح صرف ایک مسافر زخمی نہیں ہوا ہے۔

ٹیلی ویژن کی فوٹیج کے مطابق طیارے کو شدید نقصان پہنچا ہے۔اس کا پہلا ،درمیانی اور آخری حصہ الگ الگ بٹا ہوا نظر آرہا ہے۔ مسافروں کو طیارے میں پڑنے والے شگاف سے نکالا جارہا تھا۔

این ٹی وی ٹیلی ویژن نے اطلاع دی ہے کہ طیارے کو رن وے پر پھسلنے کے بعد آگ لگ گئی تھی لیکن اس پر جلد قابو پا لیا گیا ہے۔

این ٹی وی ٹیلی ویژن نے ٹرانسپورٹ کے وزیر محمد جاہت طرحان کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ اس حادثے میں بعض مسافر زخمی ہوئے ہیں۔انھوں نے مزید بتایا ہے کہ ہنگامی خدمات کے عملہ نے بعض مسافروں کو طیارے کےٹوٹے ہوئے درمیانی حصے سے نکالا ہے لیکن زیادہ تر مسافر خود ہی اس ٹوٹے طیارے سے نکل آئے تھے۔

ترک وزیر کا کہنا تھا کہ اس واقعے کے بعد اس ہوائی اڈے کو عارضی طور پر بند کردیا گیا ہے اور پروازوں کا رُخ استنبول کے مرکزی ہوائی اڈے کی جانب پھیرا جارہا ہے۔ان کی وزارت کا کہنا ہے کہ یہ حادثہ طیارے کی غلط انداز میں لینڈنگ کی وجہ سے پیش آیا ہے۔