.

کرونا وائرس سے متاثرہ افراد میں علامات 24 دن میں ظاہر ہوسکتی ہے: ماہرین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ کسی فرد کے مہلک کرونا وائرس کا شکار ہونے اور اس میں اس کی علامات ظاہر ہونے میں 24 دن کا عرصہ لگ سکتا ہے۔ یہ بات نظام تنفس کے عوارض کے ماہر ژونگ نانشان کے زیرنگرانی ایک مطالعے میں بتائی گئی ہے۔مسٹر ژونگ چین میں کرونا وائرس پھیلنے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کے بھی سربراہ ہیں۔

ماہرین طب کسی وائرس سے متاثر ہونے اورپھر اس کی علامات ظاہر ہونے کے درمیانی وقت کو نشوونما (انکیوبیشن) کا عرصہ قرار دیتے ہیں۔

قبل ازیں طبی ماہرین کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی نشوونما کا عرصہ دو سے 14 دن تک ہوسکتا ہے لیکن اتوار کو شائع شدہ اس مطالعے میں یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ یہ عرصہ تین سے 24 روز تک ہوسکتا ہے۔اس کا یہ مطلب ہے کہ زیادہ لوگ کرونا وائرس کا شکار ہوسکتے ہیں مگران میں اس کی علامات تاخیر سے ظاہر ہورہی ہیں یا تی ہیں۔

واضح رہے کہ چین سے پھیلنے والے مہلک وائرس کرونا سے دنیا بھر میں گذشتہ ڈیڑھ ایک ماہ میں 900 سے زیادہ اموات ہوچکی ہیں اور 306000 سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں۔یادرہے کہ 2002-2003ء میں پھیلنے والے سارس وائرس سے 774 ہلاکتیں ہوئی تھیں۔

کرونا وائرس پھیلنے کے بعد سے متعدد ممالک نے چین کے لیے اپنی تمام پروازیں معطل کردی ہیں۔ وہ اس مہلک وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے پیشگی حفاظتی تدابیر اختیار کررہے ہیں۔بعض ممالک تو چین سے آنے والی پروازوں کو اپنے ہوائی اڈوں پر اترنے کی اجازت بھی نہیں دے رہے ہیں۔

چین کے وسطی صوبہ حوبئی میں محکمہ صحت کے حکام نے سوموار کو روزانہ کی تازہ صورت حال کے بارے میں بتایا ہے کہ اس صوبہ میں کرونا وائرس کے 3062 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔