.

ٹرمپ نے ایران کے شدید معاند کو امریکی انٹیلی جنس کا ڈائریکٹر مقرر کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بدھ کے روز ایک اعلان میں بتایا کہ جرمنی میں امریکی سفیر رچرڈ گرینیل نیشنل انٹیلی جنس کے قائم مقام ڈائریکٹر ہوں گے۔ امریکی چینل فوکس نیوز کے مطابق اس اقدام نے قدامت پسندوں کی حوصلہ افزائی کی ہے جو انٹیلی جنس کے حوالے سے مسلسل اسکینڈلوں کے بعد اس کی نئی قیادت کے خواہش مند ہیں۔

ٹرمپ کے ہمنوا اور ٹویٹر پر سرگرم رچرڈ گرینیل ایران کے شدید ترین دشمنوں میں سے ہیں۔ وہ نیشنل انٹیلی جنس کے موجودہ قائم مقام ڈائریکٹر جوزف میگوائر کی ذمے داریاں سنبھالیں گے۔

اس خبر کے پھیلنے کے تھوڑی دیر بعد ہی حسب معمول ٹرمپ کی جانب سے ٹویٹ سامنے آ گئی۔ اس میں امریکی صدر نے کہا کہ "مجھے یہ اعلان کرتے ہوئے مسرت محسوس ہو رہی ہے کہ جرمنی میں ہمارے سفیر رچرڈ گرینیل قائم مقام طور پر نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر ہوں گے۔ انہوں نے نہایت احسن طریقے سے ہمارے ملک کی نمائندگی کی۔ میں ان کے ساتھ کام کرنے کا خواہاں ہوں۔ میں جوزف میگوائر کا بھی شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے شان دار طور پر اپنا کام انجام دیا۔ ہم ان کے ساتھ کام کرنے کے خواہاں ہیں ،،، انتظامیہ کے اندر شاید کسی دوسری حیثیت سے !".

رچرڈ گرینیل کون ہیں ؟

رچرڈ گرینیل کا شمار صدر ٹرمپ کے انتہائی ہمنواؤں میں ہوتا ہے۔ وہ ایران کو امریکا کا سب سے بڑا دشمن شمار کرتے ہیں۔

رچرڈ گرینیل کے کھاتے میں کئی عظیم کامیابیاں ہیں۔ ان میں ایران کے حوالے سے جرمنی پر دباؤ اور جوہری معاہدہ کے علاوہ چینی کمپنی ہواوے اور نورڈ اسٹریم 2 / رشیا کے معاملات میں کامیابی اور دیگر کئی امور شامل ہیں۔

رچرڈ گرینیل یہ کہہ چکے ہیں کہ "جرمنی پر یہ اخلاقی ذمے داری عائد ہوتی ہے کہ وہ ایران سے واضح اور دو ٹوک انداز میں بول دے کہ ایرانی عوام کو بنیادی انسانی حقوق سے محروم کرنا یا مظاہرین کو قتل کرنا کسی طور بھی قابل قبول نہیں"۔

گرینیل نے ٹرمپ کی ٹویٹ کرنے کی عادت کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ "یہ میرا کام بہت آسان بنا دیتا ہے"۔ گرینیل کے مطابق سفارت کار ہونے کی حیثیت سے ہمیں مسائل حل کرنے والوں کے ہراول دستے میں ہونا چاہیے ،،، ہم جنگ نہیں چاہتے بلکہ ہم تو جنگ سے گریز چاہتے ہیں اس کا مطلب ہوا کہ سفارت کاروں کو بات چیت پر قادر ہونا چاہیے۔

رچرڈ گرینیل نے منگل کے روز ٹویٹر پر کہا کہ ٹرمپ کی خارجہ پالیسی "کامیاب" ہے۔

گرینیل اپنی نئی ذمے داری کے تحت ملک میں 17 سیکورٹی اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کی نگرانی کریں گے۔