.

عرب اتحاد کی بروقت کارروائی میں حوثی ملیشیا کی بارود سے لدی کشتی تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد نے یمن کی بندرگاہ الحدیدہ پر حوثی ملیشیا کی بارود سے لدی ایک کشتی تباہ کردی ہے۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے اتوار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ اتحادی فورسز نے ایک یقینی حملے کا پتا چلا لیا تھا۔اس سے علاقائی سلامتی کو خطرہ لاحق ہوسکتا تھا اور بین الاقوامی تجارت کے بحری روٹ متاثر ہوسکتے تھے مگر عرب اتحادی فورسز نے بحیرہ احمر میں اس کشتی کا سراغ لگانے کے بعد اس کو تباہ کردیا ہے۔

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ گذشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران میں آبنائے باب المندب میں تین آبی بارودی سرنگوں کو بھی سراغ لگا کر ناکارہ بنادیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ آبنائے باب المندب یمن،جیبوتی اور ہارن آف افریقا میں اریٹریا کے درمیان واقع ہے اور یہ بحیرہ احمر کے جنوب میں ہے۔بین الاقوامی تجارت کے لیے یہ ایک اہم آبی گذرگاہ ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ حوثی باغی الحدیدہ شہر کو یمنی اور اتحادی فورسز پر حملوں کے لیے استعمال کررہے ہیں جبکہ عرب اتحاد اس ملیشیا کے خلاف سخت اقدامات جاری رکھے گا۔