.

سعودی شہریوں اورمکینوں کےعمرے اور مسجد نبویﷺ کی زیارت پرعارضی پابندی عاید

کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے سعودی شہریوں اورغیرملکی تارکین وطن کا مسجد الحرام میں داخلہ عارضی طور پر بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے سعودی شہریوں اور مکینوں کے مکہ مکرمہ میں عمرے اور مدینہ منورہ میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کی زیارت کے لیے داخلے پر عارضی طور پر پابندی عاید کردی ہے۔

سعودی وزارت داخلہ نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ فیصلہ کرونا وائرس کی صورت حال پر نظر رکھنے والی اعلیٰ سطح کی کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں کیا گیا ہے۔سعودی شہریوں اور مملکت میں مقیم غیرملکیوں کے عمرے کو عارضی طور پر معطل کیا جارہا ہے اور جونہی صورت حال میں تبدیلی آتی ہے تو اس فیصلے پر نظرثانی کی جائے گی۔

سعودی عرب کی وزارتِ صحت نے گذشتہ سوموار کو کرونا وائرس کے پہلے کیس کی تصدیق کی تھی۔اس مہلک وائرس کا شکار ہونے والے اس سعودی شہری نے حال ہی میں ایران کا سفر کیا تھا اور بحرین کے راستے ملک میں واپس آیا تھا۔ایران میں اس مہلک وائرس سے آج تک بانوے افراد مارے جاچکے ہیں اور خطے بھر میں اس کے متاثرین کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہی ہے جبکہ چین میں اس وائرس کا زور ٹوٹ چکا ہے۔

سعودی عرب نے گذشتہ جمعرات کو بیرون ملک سے عمرہ پرآنے والے زائرین کے مکہ مکرمہ میں داخلے پر عارضی پابندی عاید کردی تھی۔ سعودی وزارت خارجہ کے مطابق غیرملکیوں کا عمرے کے ویزے پر مملکت میں داخلہ عارضی طور پر معطل کیا گیا تھا۔ سعودی عرب میں کرونا وائرس سے متاثرہ ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزے پر داخلے پر بھی پابندی عاید کی گئی ہے۔

سعودی عرب نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے منگل کو بعض اضافی اقدامات کا اعلان کیا تھا اور خلیج تعاون کونسل ( جی سی سی) سے تعلق رکھنے والے شہریوں اور مکینوں کے گذشتہ چودہ روز کے دوران میں کسی اور ملک میں جانے کی صورت میں مملکت میں داخلہ محدود کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

وزارت داخلہ کے مطابق جی سی سی کے رکن باقی پانچ ممالک متحدہ عرب امارات ، بحرین ، کویت ، عُمان اور قطر سے آنے والے مسافروں کو ان میں سے کسی ملک میں مسلسل چودہ روز تک رہنے اور کرونا وائرس کا شکار نہ ہونے کا ثبوت فراہم کرنا ہوگا اور اس کے بعد ہی انھیں مملکت میں داخلے کی اجازت دی جائے گی۔

وزارت کے ایک ذریعے نے کہا ہے کہ جی سی سی کے کسی ملک سے آنے والے سعودی شہریوں یا مکینوں کو مملکت میں اپنی آمد کے فوری بعد حکام کو مطلع کرنا چاہیے اور انھوں نے اگراپنی آمد سے قبل گذشتہ چودہ روز کے دوران میں جی سی سی سے باہر کسی اور ملک کا سفر کیا ہے تو اس کے بارے میں بھی سعودی حکام کو مطلع کریں۔