.

آیت اللہ علی خامنہ ای کے ایک اور مشیر کرونا وائرس کا شکار ہوگئے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی مصالحتی کونسل کے ایک رکن محمد صدر مہلک کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں۔ ایران کی سرکاری خبری ویب گاہ انتخاب کے مدیر اعلیٰ مصطفیٰ فقہی نے جمعرات کو ایک ٹویٹ میں ان کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کی اطلاع دی ہے۔

ایران کی یہ مصالحتی کونسل سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کو مشورے دیتی ہے اور سپریم لیڈر اور پارلیمان کے درمیان کوئی تنازع پیدا ہونے کی صورت میں اس کو طے کرتی ہے۔اس کے ارکان کا تقرر علی خامنہ ای ہی کرتے ہیں۔

محمد صدر ایرانی وزیرخارجہ محمد جواد ظریف کے سینیر مشیر بتائے جاتے ہیں۔اسی مصالحتی کونسل کے ایک اور رکن محمد میر محمدی گذشتہ ہفتے اس مہلک وائرس سے بیمار پڑ کر فوت ہوگئے تھے۔ واضح رہے کہ ایران کے اب تک متعدد اعلیٰ عہدے دار اور پارلیمان کے ارکان کرونا وائرس کا شکار ہوچکے ہیں۔

مصطفیٰ فقہی نے قبل ازیں جواد ظریف کے ایک سابق مشیر حسین شیخ الاسلام کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کی اطلاع دی تھی اور ایران کے سرکاری میڈیا نے بعد میں اس کی تصدیق کی تھی۔

ایران میں اب تک چین کے بعد کرونا وائرس سے سب سے زیادہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ایرانی حکام کے مطابق جمعرات تک اس وائرس سے 107 افراد مارے جاچکے ہیں اور 3513 افراد متاثر ہوئے ہیں۔ تاہم ماہرین اس خدشے کا اظہار کررہے ہیں کہ ایرانی نظام اس مہلک وائرس کا شکار ہو کر مرنے والوں اور متاثرین کے درست اعداد وشمار جاری نہیں کررہا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ مرنے والوں کی تعداد سرکاری اعداد وشمار سے کہیں زیادہ ہوسکتی ہے۔