.

کرونا، چین اور ایران پر امریکا کا حیاتیاتی حملہ ہے: کمانڈر پاسداران انقلاب کی درفطنی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی سپاہِ پاسدارانِ انقلاب کے کمانڈر حسین سلامی نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کسی امریکی حیاتیاتی حملے کا نتیجہ ہو سکتا ہے۔

ایرانی طلباء نیوز ایجنسی 'ایسنا' کے مطابق حسین سلامی نے جمعرات کے روز کرمان شہر میں ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ ایران اب کرونا وائرس کے خلاف جنگ لڑ رہا ہے۔ اس حملے کا پہلا ہدف چین اور ایران ہو سکتے ہیں اور اس کے بعد دیگر مقامات کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے'۔

خیال رہے کہ ایران کی 'ماھان' نامی فضائی کمپنی پر الزام ہے کہ وہ چین سے کرونا وائرس ایران منتقل کرنے کی ذمہ دار ہے۔ اس کمپنی نے کرونا وائرس کے خطرات کے باوجود چین کے کئی شہروں کے لیے اپنی پروازیں جاری رکھی ہیں۔

'ماھان' ایئرلائن کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ وہ چین میں کرونا کے متاثرین کی انسانی ہمدردی کی بنیاد پرمدد کے آپریشن پرکام کررہی ہے۔

حال ہی میں ایرانی نوبل انعام یافتہ سماجی کارکن شیرین عبادی نے الزام عاید کیا تھا کہ 'ماھان' ایئرلائن چین سے کرونا وائرس ایران میں پھیلانے کی ذمہ دار ہے۔ انہوں نے مہان ایئرلائن کے چیئرمین حمدی عرب نژاد کے خلاف سخت قانونی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔

ایران نے کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے اس وائرس کے خلاف باقاعدہ اعلان جنگ کردیا ہے۔ ایرانی حکومت نے مہلک وائرس سے نمٹںے کے لیے فوج کو بھی اس جنگ میں شامل کیا ہے۔