.

کرونا وائرس نے 30 کروڑ بچوں پر تعلیم کے دروازے وقتی طور پر بند کر دیے: یونیسکو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے ادارہ سائنسی تعلیم وثقافت 'یونیسکو' نے بتایا ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کی کوشش کے دوران 12 سے زاید ممالک میں تعلیمی سرگرمیاں معطل کی گئی ہیں جس کے نتیجے میں کم سے کم 3 کروڑ طلباء کئی ہفتوں سے اسکول نہیں جا سکے۔

خیال رہے کہ چین سے پھیلنے والا کرونا وائرس اب دنیا کے 80 سے زاید ممالک میں پھیل چکا ہے۔ چین میں اب تک 95 ہزار سے زاید افراد متاثر ہو چکے ہیں جب کہ ہلاکتوں کی تعداد 3200 تک جا پہنچی ہے۔

اٹلی نے جمعرات کو کم از کم 15 مارچ تک تمام اسکول اور یونیورسٹیاں بند کرنے کا اعلان کیا۔ حکومت نے طلباء پرآن لائن تدریسی سرگرمیاں جاری رکھنے پر زور دیا ہے۔

پیرس میں مقیم یونیسکو کے ڈائریکٹر جنرل آڈری ایزولے نے کہا کہ تعلیمی اور تدریسی سرگرمیوں میں خلل کی حد اور رفتار غیر معمولی ہے۔ اگر یہ وائرس طویل عرصہ تک رہتا ہے تو اس کے نتیجے میں طلباء کو بہت زیادہ نقصان پہنچ سکتا ہے۔

صرف دو ہفتے قبل چین واحد ملک تھا جہاں اسکول بند کیے گئے تھے مگر اب ایک درجن ممالک کو اسکول بند کرنا پڑے ہیں۔ آنے والے دنوں میں اس فہرست میں اور بھی اضافہ ہو سکتا ہے۔

اقوام متحدہ کے ادارے نے بتایا کہ نو دیگر ممالک نے کچھ علاقوں میں اسکول بند کر دیئے ہیں۔ اگر ان ممالک نے بھی تمام اسکولوں کو بند رکھنے کا حکم دیا تو مزید 180 ملین طلباء کو عارضی طور پر اسکولوں میں داخلے پر پابندی کا سامنا کرنا ہوگا۔