.

سعودی عرب میں کرونا کے باعث ہوٹلوں اور شادی ہالوں میں عوامی تقریبات پر پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے کرونا وائرس کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر ملک بھرمیں شادی ہالوں، ہوٹلوں اور دیگر ایسے مراکز میں عوامی تقریبات کے انعقاد پر پابندی عاید کردی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی وزارت داخلہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ہوٹلوں اور بینکویئٹ ہالز میں کسی قسم کی تقریبات روکنے کا مقصد کرونا وائرس کی وباء کو پھیلنے سے روکنا اور شہریوں کی زندگی کا تحفظ یقینی بنانا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ملک میں پبلک مقامات پر تقریبات پرپابندی کا فیصلہ آج 13 مارچ بہ روز جمعہ سے نافذ کردیا گیا ہے۔ یہ پابندی عارضی ہے تاہم جب تک ملک میں کرونا کا خطرہ موجود ہے اس وقت تک یہ پابندی برقرار رہے گی۔ اس فیصلے کے تحت شادی ہالوں، ہوٹلوں، ریسٹ ہائوسز اور دیگر مقامات پر تقریبات کے انعقاد پر پابندی ہوگی۔ مملکت کی گورنریوں کی مقامی انتظامیہ اس پرعمل درآمد یقینی بنائے گی۔

سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی'ایس پی اے' کے مطابق ہوٹلوں اور شادی ہالوں میں عوامی تقریبات پرپابندی کے فیصلے کا مقصد کرونا وائرس کے خطرات کے پیش نظرشہریوں کی جانوں کو تحفظ فراہم کرنا ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں چار ہزار افراد کی اسکریننگ کی گئی ہے اور اب تک مملکت میں کرونا کے متاثرہ تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 45 ہے۔