.

متحدہ عرب امارات:سینما، نائٹ کلب،کنسرٹس اور شادی کے اجتماعات پر پابندی

یو اے ای کی شام ، عراق ، لبنان اور ترکی کے لیے 17 مارچ سے تمام پروازیں معطل،ابوظبی میں مشہور میوزیم بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں شامل دبئی نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اتوار 15 مارچ سے اس ماہ کے آخرتک تمام تفریحی سرگرمیوں اور شادی کے اجتماعات پر پابندی عاید کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دبئی کی حکومت کے میڈیا دفتر نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ نائٹ کلبوں ، سینماگھروں میں سرگرمیاں اور کنسرٹس کا انعقاد مارچ کے آخر تک معطل کیا جارہا ہے۔

قبل ازیں امارت ابوظبی نے سیاحوں کی پسندیدہ سیرگاہ لوفرے میوزیم اور تھیم پارک کو کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ابو ظبی نے سینما گھروں کو پہلے ہی بند کردیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے اب تک کرونا وائرس کے 85 کیسوں کی اطلاع دی ہے اور بتایا ہے کہ ان میں 23 افراد صحت یاب ہورہے ہیں۔

یواے ای نے کرونا وائرس پھیلنے کے بعد سے کئی ایک اقدامات کیے ہیں،ملک میں اسکولوں اور جامعات کو عارضی طور پر بند کردیا ہےاور اب آن لائن تدریسی سرگرمیاں جاری ہیں۔اس کے علاوہ بار، نائٹ کلبوں اور بعض مشہور سیاحتی مقامات کو بھی بند کیا جاچکا ہے۔

پروازوں کی معطلی

متحدہ عرب امارات نے حفظِ ماتقدم کے طور پر شام ، عراق ، لبنان اور ترکی کے لیے 17 مارچ سے اپنی پروازیں معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور غیرملکیوں کو ویزے کے اجراء پر بھی پابندی عاید کردی ہے۔

یواے ای کی جنرل اتھارٹی برائے شہری ہوابازی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ان چار ممالک کے لیے پروازوں کی معطلی کا فیصلہ عالمی صورت حال کا جائزہ لینے کے بعد کیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عارضی طور پر غیرملکی شہریوں کو ویزوں کے اجراء پر بھی پابندی عاید کردی ہے۔یو اے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق 17 مارچ سے غیرملکیوں کو ویزوں کا اجراء معطل کیا جارہا ہے۔البتہ غیرملکی سفارت کار اس فیصلے سے مستثنا ہوں گے۔