.

کرونا وائرس: یو اے ای میں جمعرات سے مسافروں کو آمد پر ویزوں کا اجراء معطل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کےلیے جمعرات 19 مارچ سے ہوائی اڈوں پر مسافروں کو آمد پر ویزوں کا اجرا عارضی طور پر معطل کرنے کا اعلان کیا ہے۔البتہ سفارتی پاسپورٹس کے حاملین اس فیصلے سے مستثنا ہوں گے۔

امارات کے لندن میں سفارت خانے نے ٹویٹر پر ایک بیان میں اس فیصلے کی اطلاع دی ہے۔

یو اے ای میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے سفارت خانوں نے الگ سے اپنے بیانات میں کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں مقیم اقامتی ویزوں کے حاملین اس حکم سے متاثر نہیں ہوں گے۔

یو اے ای نے حالیہ دنوں میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کئی ایک اقدمات کیے ہیں۔اس نے بہت سے سرکاری اور نجی مقامات ،جگہوں ، سیر گاہوں اور ہوٹلوں کو بند کردیا ہے۔

یو اے ای میں شامل دبئی نے منگل کو ریستورانوں کو یہ ہدایت کی تھی کہ وہ کھلی جگہوں پر رات اور دن میں کھانے پینے کی اشیاء کی فروخت اور خدمات کا سلسلہ موقوف کردیں۔دبئی کے حکام نے اس حکم کی خلاف ورزی پر نو کیفے بند کردیے ہیں۔انھوں نے پابندی کے باوجود شیشہ بیچنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا تھا۔

دبئی نے سوموار سے اس ماہ کے آخر تک تمام ہوٹل ، بار ، پب اور لاؤنجز کو بند کردیا ہے۔اس نے گذشتہ ہفتے کے روز تمام تھیم پارک ،تفریح گاہیں ،نائٹ کلب اور سینماگھر بند کردیے تھے اور شادی کی تقریبات اور کنسرٹس پر بھی مارچ کے آخرتک پابندی لگا دی تھی۔

امارات نے تمام جِم ، کھیلوں کے مراکز اور سپرنگ کیمپ بھی بند کردیے ہیں اور مقامی اور مقیم افراد کو ہدایت کی ہے کہ وہ کسی ایک جگہ پر پچاس سے زیادہ تعداد میں اکٹھے نہ ہوں۔

ابو ظبی نے بھی اہم سیاحتی مقامات اور سیرگاہیں بند کردی ہیں۔ان میں لوفرے میوزیم بھی شامل ہے۔ابوظبی کے ولی شیخ محمد بن زاید آل نہیان کا کہنا ہے کہ ملک میں کرونا وائرس کی وبا سے نمٹنے کے لیے ہر قسم کی تیاریاں مکمل ہیں اور تمام شہریوں کو خوراک اور ادویہ کی دستیابی یقینی بنائی جائےگی۔