.

جزیرہ نما ریاست 'موناکو' کا شہزادہ کرونا وائرس کا شکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کرونا وائرس نے پورے یورپ کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق فرانس اور اٹلی کے درمیان واقع ایک چھوٹی جزیرہ نما خود مختار یورپی ریاست 'موناکو' کا شہزادہ البرٹ دوم کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں۔

موناکو کے شاہی محل سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شہزادہ البرٹ دوم کے کرونا کے ٹیسٹ کی رپورٹ پازیٹو آئی ہے تاہم ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ وہ حکومتی امور اپنی نجی رہائش گاہ سے جاری رکھ سکتے ہیں۔ ان کی خرابی صحت سے کسی دوسرے فرد کو کوئی پریشانی لاحق ہونے کا اندیشہ نہیں۔

موناکو پیلس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے ہفتے کے شروع میں شہزادے کا طبی معائنہ کیا گیا اور نتیجہ مثبت نکلا۔

تین دن پہلے وزیر اعظم کے عہدے کے مساوی وزیر مملکت سیرگ ٹیل بھی کرونا وائرس کا شکار ہوچکے ہیں۔

ایک بیان میں شہزادہ موناکو نے ریاست کے عوام پر زور دیا کہ وہ کرونا سے بچنے کے لیے تنہائی کے اقدامات کا احترام کریں۔

شہزادہ البرٹ شہزادی گریس کا دوسرا بیٹا ہے - سابقہ گریس کیلی - اور پرنس رینیئر۔ البرٹ پانچ بار اولمپک آئس اسکیٹنگ کھیل جیت چکے ہیں۔ وہ حالیہ برسوں میں عالمی سطح پر ماحولیاتی کارکن رہے ہیں۔

روانی کے ساتھ انگریزی اور فرانسیسی بولنے والے البریغ نے 1981 میں میساچوسٹس کے ایمہرسٹ کالج سے پولیٹیکل سائنس میں گریجویشن کی تھی۔ اور وہ انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کے ممبر بھی ہیں۔