.

یو اے ای میں کرونا وائرس کے 50 نئے کیسوں کی تصدیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے منگل کے روز کرونا وائرس کے 50 نئے کیسوں کی تصدیق کی ہے۔ان کے بعد ملک میں کرونا وائرس کے مریضوں تعداد بڑھ کر 248 ہوگئی ہے۔

یو اے ای کی وزارتِ صحت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ تمام نئے کیس پہلے سے متاثرہ افراد سے میل ملاپ اور رابطوں کی وجہ سے اس مہلک وائرس کا شکار ہوئے ہیں۔

ان متاثرین میں ایک ، ایک کا تعلق سری لنکا، برطانیہ ، سعودی عرب ، یمن ، تُونس ، جنوبی افریقا ، بیلجیئم ،جنوبی کوریا ، بلغاریہ ،فرانس ، جمہوریہ چیک ، آسٹریلیا، لبنان ، کینیا، مالدیپ، سوڈان ، ایران ، آئیرلینڈ، مراکش، پاکستان ، اور سویڈن سے ہے۔دو، دو افراد اٹلی ، مصر ، یو اے ای،اسپین ، نیدر لینڈز، اردن ، فلپائن ، تین، تین کا تعلق امریکا ، بنگلہ دیش اور فلسطین اور چھے کا تعلق بھارت سے ہے۔

وزارت کا مزید کہنا ہے کہ ’’ان افراد کی حالت مستحکم ہے، انھیں الگ تھلگ کردیا گیا ہے اور انھیں ضروری طبی امداد مہیا کی جارہی ہے۔‘‘

وزارت نے یہ بھی بتایا ہے کہ کرونا وائرس سے متاثرہ مزید چار کیس صحت یاب ہوگئے ہیں۔ان میں تین پاکستانی اور ایک بنگلہ دیشی ہے۔اب تک یو اے ای میں کرونا وائرس کا شکار ہونے والے 45 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

احتیاطی تدابیر

متحدہ عرب امارات کی وزارتِ صحت نے کرونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے سوموار سے تمام شاپنگ مال ، خریداری مراکز ، تجارتی ادارے اور کھلی مارکیٹیں دو ہفتے تک بند کردی ہیں۔تاہم مچھلی بازار، سبزی اور گوشت کی مارکیٹیں اس حکم سے مستثنا ہوں گی اور کھلی رہیں گی۔

ریستوران بھی دو ہفتے تک بند رہیں گے اور وہ صرف گھروں میں کھانے پینے کی اشیاء مہیا کرسکیں گے۔یو اے ای کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے گشتہ اتوار سے دوہفتے تک تمام مسافر اور ٹرانزٹ پروازوں کی آمد ورفت پر پابندی عاید کردی ہے۔

یو اے ای نے 16 مارچ کوکرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کئی ایک اقدمات کا اعلان کیا تھا۔اس نے بہت سے سرکاری اور نجی مقامات ،جگہوں ، سیر گاہوں اور ہوٹلوں کو بند کردیا تھا۔

یو اے ای میں شامل دبئی نے ریستورانوں کو یہ ہدایت کی تھی کہ وہ کھلی جگہوں پر رات اور دن میں کھانے پینے کی اشیاء کی فروخت اور خدمات کا سلسلہ موقوف کردیں۔دبئی نے تمام تھیم پارک ،تفریح گاہیں ،نائٹ کلب اور سینماگھر بند کردیے تھے اور شادی کی تقریبات اور کنسرٹس پر بھی مارچ کے آخرتک پابندی لگا دی تھی۔امارت نے تمام جِم ، کھیلوں کے مراکز اور سپرنگ کیمپ بھی بند کردیے ہیں۔ابو ظبی نے بھی اہم سیاحتی مقامات اور سیرگاہیں بند کردی ہیں۔ان میں لوفرے میوزیم بھی شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں