.

اسرائیلی وزیراعظم نے معاون کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد تنہائی اختیار کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو نے اپنے ایک ساتھی کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد خود ساختہ تنہائی اختیار کر لی ہے۔

نیتن یاہو کا منگل کو کرونا وائرس کا ایک اور ٹیسٹ ہو گا۔اس سے پہلے ان کا 15 مارچ کو ٹیسٹ ہوا تھا اور اس کا نتیجہ منفی آیا تھا۔

اسرائیلی حکام کے مطابق بنیامین نیتن یاہو طبّی مشورے کے بعد اب بیشتر اجلاس ویڈیو کانفرنس کے ذریعے منعقد کررہے ہیں اور وہ آج حکام کے ساتھ ایک اجلاس منعقد کررہے ہیں، اس میں ملک کے بعض حصوں میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

اسرائیل کی وزارتِ صحت نے کرونا وائرس سے متاثرہ افراد اور ان سے میل ملاپ رکھنے والوں کے لیے رہ نما ہدایات جاری کی ہیں ،انھیں احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کا مشورہ دیا ہے اور کہا ہے کہ اگر کسی شخص کا کرونا وائرس سے متاثرہ شخص سے میل ملاپ ہوتا ہے تو پھر وہ خود کو چودہ روز کے لیے تنہائی میں رکھے۔

اسرائیلی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق نیتن یاہو کا کرونا وائرس سے متاثرہ معاون گذشتہ ہفتے پارلیمان کے اجلاس میں شریک ہوا تھا۔اس میں وزیراعظم کے علاوہ حزبِ اختلاف کے ارکان بھی شریک تھے۔

اسرائیل نے سوموار تک کرونا وائرس کے 4347 کیسوں اور 15 ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔اس کی وزارت صحت نے خبردار کیا ہے کہ مہلوکین اور متاثرین کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوسکتا ہے اور یہ ہزاروں میں ہوسکتی ہے۔