ٹرمپ کا ایک بار پھر کرونا ٹیسٹ ... نتیجہ کیا آیا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایک بار پھر کرونا وائرس کا ٹیسٹ کرایا ہے۔ جمعرات کے روز ہونے والے اس نئے ٹیسٹ کا نتیجہ بھی منفی آیا ہے۔

امریکی صدر کا یہ کرونا وائرس کا دوسرا ٹیسٹ ہے۔ گذشتہ ماہ برازیلی صدر اور ان کے وفد سے ملاقات کے بعد بھی ٹرمپ کا کرونا ٹیسٹ کیا گیا تھا۔ اس مرتبہ ٹیسٹ کے لیے نیا اور تیز تر طریقہ استعمال کیا گیا۔ ٹرمپ کے مطابق یہ ٹیسٹ چند منٹوں میں مکمل ہو گیا اور اس کا نتیجہ سامنے آنے میں 15 منٹوں سے زیادہ وقت درکار نہیں ہوا۔

ٹرمپ نے صحافیوں کو بتایا کہ ان کی انتظامیہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے تمام مطلوبہ اقدامات کرے گی .. اور کرونا کی ویکسین کے حوالے سے تجربات کا سلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ انتظامیہ چھوٹی کمپنیوں کو اس وائرس کے اثرات سے محفوظ رکھنے کے لیے بھی کام کر رہی ہے۔ اسی طرح امریکی فضائی کمپنیوں کو سپورٹ کرنے کے منصوبے پر بھی کام کیا جائے گا۔ ٹرمپ انتظامیہ واضح کر چکی ہے کہ وہ ملک میں 3 کروڑ چھوٹے کاروباروں کو سپورٹ پیش کرے گی۔

صدر ٹرمپ نے بتایا کہ انہوں نے عمر رسیدہ افراد کو کرونا سے بچانے کے لیے نئی ہدایات وضع کر دی ہیں۔ امریکی صدر نے ہسپتالوں میں مطلوبہ تعداد میں مصنوعی تنفس کی مشینوں کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا ہے۔ ٹرمپ کے مطابق کئی کمپنیاں اس منصوبے پر کام کر رہی ہیں۔

امریکی صدر نے بتایا کہ صرف نیویارک کو مصنوعی تنفس کی 4000 ہزار سے زیادہ مشینیں فراہم کی گئی ہیں جب کہ بقیہ ریاستوں میں 7600 کے قریب مشینیں دی گئیں۔ امریکی حکام نے تمام ریاستوں میں کروڑوں ماسک فراہم کیے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں