روس میں ملازمین کو اپریل کی تنخواہ کے ساتھ چھٹیاں، کرونا کے مقابلے میں مدد ملے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

روسی صدر ولادی میر پوتین نے کرونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے تمام ملازمین کے لیے تنخواہ کے ساتھ ماہ اپریل کی تعطیلات کا اعلان کیا ہے۔

صدر پوتین نے ٹیلی ویژن پر تقریر کرتے ہوئے کہا کہ میں نے ملک بھر کے ملازمین کے لیے اپریل کے مہینے کی تعطیل کا فیصلہ کیا ہے۔ 28 مارچ سے 30 اپریل تک تمام ملازمین رخصت پر ہوں گے اور انہیں باقاعدہ اپریل کی تنخواہ دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ روسی علاقوں کو ان اداروں کا تعین کرنا ہو گا جو اپنا کام جاری رکھیں گے۔ اس کے علاوہ شہریوں کو ایک دوسرے سے دور رکھنے کے لیے اقدامات کرنا ہوں گے۔

گذشتہ ہفتے ولادی میر پوتین نے کہا تھا کہ روس 3 ماہ سے بھی کم عرصے میں کرونا وائرس کا خاتمہ کرنے میں کامیاب ہو جائے گا۔

انہوں نے کہا تھا کہ کچھ ممالک کہتے ہیں کہ (کرونا وائرس) کے خلاف جنگ بہت طویل ہوگی، لیکن انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ روس دو سے تین ماہ کے اندر اس بحران سے نکل آئے گا۔ انہوں نے اپنے شہریوں کو یقین دلایا کہ ہم یقینی طور پر اس بحران سے نکل جائیں گے۔ زیادہ سے زیادہ یہ بحران دو یا تین ماہ تک جاری رہے گا۔

پوتین نے زور دے کر کہا تھا کہ کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات سخت اور موثر ہونے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سے اس وائرس سے تیزی سے چھٹکارا حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔

روسی صدر ولادی میر پوتین نے کرونا کی وباء پر قابو پانے کے لیے امریکا کی مدد کی ہے اور طبی امدادی سامان پر مشتمل ایک طیارہ امریکا روانہ کیا ہے۔ روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ ایک فوجی طیارہ بدھ کی صبح ماسکو سے امریکا روانہ ہوا۔

روسی وزارت دفاع کے ذریعہ نشر کی جانے والی فوٹیج میں ماسکو کے چکالوسکی ہوائی اڈے پر "انٹونوف اے این -121" طیارے کے اندر طبی سامان دکھایا گیا۔

سوموار کو روسی صدر پوتین اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مابین ٹیلفیون پربات چیت ہوئی تھی۔ دونوں رہ نماؤں نے کرونا وائرس کے پھیلنے سے نمٹنے کے لیے باہمی تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔

کریملن نے ایک بیان میں کہا امدادی سامنا پر مشتمل طیارہ واشنگٹن کے مطالبے پر بھیجا گیا۔ کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے کہا کہ ٹرمپ نے روس کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں