.

کرونا سے ڈونلڈ ڈک اور مکی مائوس بھی دہشت زدہ، ڈزنی ملازمین فارغ کرنے پر مجبور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

حال ہی میں کارٹون کی دُنیا کی سب سے بڑی خاکہ ساز کمپنی ڈزنی نے کرونا وائرس کے نتیجے میں اپنی تفریح گاہوں کی بندش کے بعد ملازمین کی ایک بڑی تعداد کو عارضی طور پر فارغ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

امریکا میں تفریحی اور سیاحتی شعبےکی سب سے بڑی کمپنی ڈزنی کا کہنا ہے کہ وہ غیراساسی نوعیت کے ملازمین کو 19 اپریل کے بعد فارغ کر دے گی۔ کمپنی کی طرف سے متوقع طور پرفارغ کیے جانے والے ملازمین کی تعداد بیان نہیں کی اور یہ بھی واضح نہیں کیا کہ کون کون سے سیکشن کے ملازمین کو فارغ کیا جائے گا۔

ڈزنی کمپنی نے 12 مارچ کو کرونا کےپھیلنے کے خطرے کے پیش نظر فرانس اور امریکا میں اپنے تفریحی پارک بند کرنے کا اعلان کیا تھا۔

امریکی ریاست فلوریڈا میں قائم 'ڈزنی ورلڈ' دنیا کا سب سے بڑا تفریحی اور سیاحتی مرکز ہے جہاں سال 2018ء میں 21 ملین سیاح آئے جب کہ لاس اینجلس میں قائم ڈیزنی لینڈ میں آنے والے سیاحوں کی تعداد 18 اعشاریہ 7 ملین تھی۔

امریکا میں اخباری ذرائع کے مطابق ڈیزنی کمپنی کے12 تفریحی مراکز، ان میں قائم ہوٹلوں اور سمندری سیاحتی مراکزمیں ایک لاکھ 22 ہزار افراد ملازمت کرتے ہیں۔