.

اسپین جانے والی وینٹی لیٹرز کی کھیپ ترکی کے قبضے میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسپین کے ایک اعلان کے مطابق ترکی کے حکام نے وینٹی لیٹرز (مصنوعی تنفس کی مشینوں) سے بھرا ایک طیارہ قبضے میں لے لیا ہے۔ یہ طیارہ چین سے ہسپانیہ جا رہا تھا۔

اسپین کی وزیر خارجہ جونزالیس لایا نے جمعے کے روز انکشاف کیا کہ ترکی کی حکومت نے گذشتہ ہفتے کے روز سے انقرہ میں طبی ساز و سامان کی ایک کھیپ کو اپنے قبضے میں لے رکھا ہے۔ چین سے خریدا گیا یہ ساز و سامان ہسپانیہ لایا جا رہا تھا۔ وزیر خارجہ کے مطابق ترکی کی حکومت نے اپنے ملک میں طبی ساز و سامان اور مشینوں کی برآمدات پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔ اسے تشویش ہے کہ بصورت دیگر ملک میں صحت کے نظام کو برقرار نہیں رکھا جا سکے گا۔

اسپین کے ذرائع ابلاغ کے مطابق قبضے میں لی گئی کھیپ بہت قیمتی ہے۔ اس لیے کہ کھیپ میں کرونا وائرس کے مریضوں کے علاج کے لیے 162 وینٹی لیٹر مشینیں ہیں جو انتہائی نگہداشت کے طبی یونٹوں کے لیے مخصوص ہوتی ہیں۔

جمعے کے روز اسپین میں حکام نے اعلان کیا تھا کہ کرونا کے سبب مزید 935 افراد فوت ہو گئے ہیں۔ اس طرح ہسپانیہ میں اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد )10935( اطالیہ سے زیادہ ہو گئی ہے۔ ہسپانیہ میں کرونا کے کیسوں کی مجموعی تعداد 117710 تک پہنچ گئی ہے۔ کرونا سے متاثرہ افراد کی تعداد کے لحاظ سے ہسپانیہ کا امریکا کے بعد دوسرا نمبر ہے۔

ادھر ترکی میں وزیر صحت فخر الدین قوجہ کے مطابق جمعے کے روز تک ملک میں کرونا کے سبب فوت ہونے والے افراد کی تعداد 425 ہو چکی ہے۔ ملک میں کرونا کے تصدیق شدہ کیسوں کی تعداد 20921 ہے۔ ترکی میں اس وبائی مرض کے نمودار ہونے کے بعد سے اب تک 141716 افراد کا کرونا ٹیسٹ کیا جا چکا ہے۔