.

جاپان کی طرف سے سعودی عرب سمیت 20 ممالک کو کرونا کے علاج کی دوائی کا تحفہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جاپان کی حکومت کی طرف سے کرونا کےعلاج کے لیے استعمال کی جانے والی دوائی کی بڑی مقدار سعودی عرب سمیت 20 ممالک کو عطیہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اخبار جاپان ٹائمز کے مطابق جاپانی وزیر خارجہ توشیمیتسو موتیگی کے حوالے سے بتایا کہ 'کوویڈ – 19' مریضوں کے علاج کے لیے دنیا کے 20 ممالک کو 'ایگن اینٹی انفلوئنزا' دوائی مفت فراہم کرنے کرنے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جاپان کی طرف سے تیار کردہ یہ دوائی 20 ممالک کو دی جائے گی جسے 'کرونا' (کوویڈـ19) کے مریضوں کے علاج کے لیے استعمال کیا جائے گا۔ جاپان کی طرف سے جن ممالک کو یہ دوائی فراہم کی جائے گی ان میں سعودی عرب ، انڈونیشیا ، ایران ، ترکی ، بلغاریہ ، جمہوریہ چیک اور میانمار شامل ہوں گے۔ اس کےعلاوہ 30 دوسرے ممالک نے بھی جاپانی ساختہ دوائی کے حصول میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

جاپان اقوام متحدہ کے دفتر برائے پروجیکٹ سروسز 'یو این او پی ایس' کو Fujifilm Holdings Corp. کی تیار کردہ ' Favipiravir' نامی دوائی کی خریداری اور اسے دوسرے ممالک کو فراہم کرنے کے لیے 10 ملین ڈالر کی گرانٹ فراہم کرے گا۔

حال ہی میں جاپانی وزیر خارجہ نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ جاپان دلچسپی رکھنے والے ممالک کے ساتھ بین الاقوامی سطح پر ایویگن کے بارے میں کلینیکل ریسرچ کو بڑھانے کے لئے تعاون کر رہا ہے۔

یہ قابل ذکر ہے کہ چین میں ووہان یونیورسٹی اور دیگر اداروں کے محققین نے اس سے قبل یہ ذکر کیا تھا کہ ایویگن کرونا وائرس والے مریضوں کےعلاج میں کافی موثر ثابت ہو رہی ہے۔