.

یونانی لڑاکا جہازوں نے ترک جنگی طیاروں کی طرابلس کی طرف پرواز ناکام بنا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے پڑوسی ملک یونان نے ترکی کے جنگی طیاروں کی لیبیا کے دارالحکومت طرابلس کے بین الاقوامی ہوائی اڈے معیتیقہ کی طرف پرواز ناکام بنا دی۔

یونانی ذرائع ابلاغ کے مطابق جمعہ کے روز بحیرہ روم کی فضائی حدود سے ترکی کے 'ایف 16' جنگی طیاروں نے لیبیا کی طرف پرواز کی کوشش کی تو یونانی فضائی کو اس کا علم ہوگیا۔ اس پریونانی جنگی طیارے فوری حرکت میں آئے اور انہوں نے ترکی کے لیبیا کے لیے جنگی مشن کو روک دیا۔

اتیھنز کے ذرائع کے مطابق یونان کے 11 لڑاکا طیاروں نے ترک جنگی طیاروں کو روکنے کی مہم میں حصہ لیا۔ تاہم دونوں ملکوں کے جنگی طیاروں کے درمیان ٹکرائو نہیں ہوا۔

خیال رہے کہ ترکی پر الزام ہے کہ وہ لیبیا کے جنرل خلیفہ حفتر کی زیرکمان نیشنل آرمی کے خلاف قومی وفاق حکومت کی مسلح، افرادی قوت اور مالی مدد کررہا ہے۔

لیبی فوج کے ایک ذمہ دار نے بتایا کہ انٹیلی جنس معلومات نے حالیہ ایام میں لیبیا کے ساحلی علاقوں میں ترک کی غیرمسبوق مشکوک سرگرمیاں نوٹ کی ہیں۔

لیبی فوج نے یونانی جنگی طیاروں کی مہم کے بارے میں العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ترکی کے 'ایف 16، بوئنگ ،سی 135 اور 'ای 7' طرز کے جہازوں کی مدد سے لیبیا کی قومی وفاق کی وفادر ملیشیائوں کو میزائل اور دیگر جنگی سازومان کیا جا رہا ہے۔

دوسری طرف ترکی کی وزارت دفاع نے یونان اور لیبیا کی نیشنل آرمی کے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا ہے۔ ترکی کا کہنا ہے کہ لیبیا بحیرہ روم میں اس کی فوج ان دنوں مشقیں کررہی ہے اور بعض ممالک ان مشقوں کو لیبیا میں فوجی مداخلت سے تعبیر کررہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں