.

نیویارک : کرونا وائرس کے مریضوں کےعلاج پر مامورخاتون ڈاکٹر نے خودکشی کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی ریاست نیویارک میں کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرنے والی ایک خاتون ڈاکٹر نے خودکشی کر لی ہے۔

ان کے خاندان ، پولیس اور ان کے ساتھی معالجین نے کہا ہے کہ کرونا کی وَبا پھیلنے کے بعد وہ بھی دوسرے بہت سے طبی کارکنان کی طرح ذہنی تناؤ کا شکار ہوگئی تھیں۔

پولیس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ49 سالہ ڈاکٹر لورنا برین شارلوٹسویل، ورجینیا میں اپنے خاندان کے ساتھ رہ رہی تھیں۔انھوں نے خود کو زخمی کر لیا تھا اور وہ ان زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گئی ہیں۔

ڈاکٹر برین مین ہیٹن میں واقع نیویارک پریبسٹرین ایلن اسپتال کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ میں کام کرتی تھیں۔اس اسپتال میں اب تک کرونا وائرس کے بڑی تعداد میں مریض لائے گئے ہیں۔

ابھی یہ واضح نہیں کہ انھوں نے اپنے ہاتھوں زندگی کا خاتمہ کیوں کیا ہے۔ان کے خاندان ،پولیس اور ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ وہ کرونا کی وَبا پھیلنے کے بعد بہت زیادہ تناؤ کا شکار ہوگئی تھیں۔ان کے والد فلپ برین نے نیویارک ٹائمز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’اس نے اپنے پیشہ ورانہ فرائض انجام دینے کی بھرپور سعی کی ہے مگر اس نے میری بیٹی کی جان لے لی ہے۔‘‘

انھوں نے بتایا کہ متوفیہ کسی ذہنی عارضے میں مبتلا نہیں تھی۔وہ خود بھی کرونا وائرس کا شکار ہوگئی تھی لیکن صحت یاب ہونے کے بعد اس نے اپنے فرائض انجام دینا شروع کردیے تھے۔

شارلوٹسویل پولیس کے سربراہ راشل بریکنے کا کہنا ہے کہ ’’ کرونا وائرس کے مریضوں کا سب سے پہلے سامنا کرنے والے اور ان کے علاج میں پیش پیش طبی کارکنان ذہنی تناؤ یا جسمانی اثرات سے مستثنیٰ نہیں ہیں۔‘‘

امریکی کالج برائے ایمرجنسی معالجین کے صدر ولیم ژاک کے بہ قول ڈاکٹر برین کی الم ناک موت ہمیں یہ باور کراتی ہے کہ طبی کارکنان کن مسائل سے دوچار ہیں اور کن مشکل حالات سے گزر رہے ہیں۔

انھوں نے ایک بیان میں کہا کہ’’ہمارے بہت سے اسپتالوں میں ناممکنہ صورت حال نے ہم میں سے بہت سوں کو زخم خوردہ کردیا ہے۔میں ڈاکٹر برین کے بارے میں تصور ہی کرسکتا ہوں، انھوں نے اپنی صلاحیت سے زیادہ برداشت کیا ہے،انھوں نے ایسا کسی کمزوری نہیں بلکہ ہمدردی کی بنا پر کیا تھا اور یہی ان کی قوت تھی۔‘‘

ڈاکٹر برین کے اسپتال نے انھیں ایک ہیرو قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ انھوں نے شعبہ حادثات میں کام کرتے ہوئے میڈیسن کے اعلیٰ ترین معیارات قائم کیے ہیں۔

واضح رہے کہ ریاست نیویارک امریکا میں کرونا وائرس کی وبا سے سب سے زیادہ متاثر ہوئی ہے اور اب تک اس ریاست میں 17300 سے زیادہ افراد اس مہلک وائرس کا شکار ہوکر ہلاک ہوچکے ہیں۔