.

سعودی عرب میں کرونا سے متعلق افواہیں پھیلانے والوں سے سختی سے نمٹنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوٹر نے ملک میں کرونا وائرس کے حوالے سے افواہیں پھیلانے والے قوم دشمن عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا اعلان کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن دفتر کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا، انٹرنیٹ یا دیگر وسائل کے ذریعے نظام عام میں خلل ڈالنے، کرونا وائرس کے بارے میں غلط معلومات پھیلانے اور وبا کے حوالے سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیلانے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائےگا۔

بیان میں شہریوں پر زور دیا گیا ہے کہ وہ کرونا وبا سے متعلق غیر سرکاری اور غیر مصدقہ معلومات پر توجہ نہ دیں اور افواہیں پھیلانے میں ملوث عناصر کی نشاندہی کرکے ان کے خلاف قانونی کارروائی میں مدد کریں۔

پراسیکیوٹر کی طرف سے ٹویٹر پر پوسٹ کردہ بیان میں کہاگیا ہےکہ کرونا کے بارے میں شہریوں کو درست معلومات فراہم کرنا حکومت کا اخلاقی فرض اور قانونی ذمہ داری ہے۔عوام الناس کو کرونا سے متعلق سرکاری سطح پرملنے والی معلومات پریقین اور بھروسہ کرنا چاہیے۔ اگر کوئی شخص کرونا کی وبا کے بارے میں غلط معلومات پھیلا رہا ہے تو اس کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔