کرونا وائرس: بحرین میں پابندیوں میں نرمی،دکانیں کھولنے کی اجازت،ریستوران بند رہیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بحرین نے کرونا وائرس کی وَبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں میں نرمی کردی ہے اور جمعرات سے اس ننھی خلیجی عرب ریاست میں دکانیں اور صنعتی ادارے کھولے جارہے ہیں جبکہ ریستوران بدستور بند رہیں گے۔

بحرین نے مارچ کے آخر میں غیر ضروری کاروباروں اور دکانوں کو بند کردیا تھا اور غیرملکیوں کے ملک میں داخلے پر پابندی عاید کردی تھی لیکن دوسری خلیجی ریاستوں کی طرح کرفیو نافذ نہیں کیا تھا۔

بحرین کی وزارت صحت کے حکام نے بدھ کے روز نیوز کانفرنس میں کہا ہے کہ جو کاروبار یا ادارے کھولے جارہے ہیں ،ان کے ملازمین اور صارفین کاروباری میل جیل کے دوران میں چہرے پر ماسک پہن کر رکھیں اور جسمانی فاصلہ اختیار کریں۔سینما گھر ، کھیلوں کی جگہیں اور حمام بدستور بند رہیں گے۔

واضح رہے کہ بحرینی حکومت نے رمضان سے قبل ہائپر مارکیٹوں ، سُپر مارکیٹوں، کولڈ اسٹورز ،قصاب ،سبزی فروشوں اور مچھلی یا گوشت کو دکانوں کو کھلا رکھنے کی اجازت دے دی تھی۔ان کے علاوہ ہرقسم کی بیکریاں ، پیٹرول اور گیس اسٹیشن ، اسپتال ، کلینکس ، دواخانے اور امراض چشم کی دکانیں کھلی ہیں۔

ان اداروں کے دفاتر بھی کھلے ہیں جو اشیاء درآمد کرتے یا اشیاء تقسیم کرتے ہیں۔گاڑیوں کی ورکشاپیں اور فاضل پرزہ جات کی دکانیں ،تعمیراتی صنعت کے ادارے کھلے ہیں اور بنک اور کرنسی کے لین دین کا کام کرنے والی ایجنسیوں کے علاوہ فیکٹریوں اور مینو فیکچرنگ کمپنیوں کو بھی کھولنے کی اجازت ہے۔

بحرین نے اب تک کرونا وائرس کے 3720 کیسوں کی اطلاع دی ہے اور اس مہلک وائرس کا شکار آٹھ افراد وفات پا چکے ہیں۔خلیج تعاون کونسل کے رکن چھے ممالک میں کرونا وائرس کے 76 ہزار سے زیادہ مریضوں کی تصدیق کی گئی ہے اور ان ممالک میں کووِڈ-19 سے 421 اموات ہوئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں