.

اسلام پسند توکل کرمان کی 'فیس بک' کی طرف سے تقرری فرانس میں اظہار تشویش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی کانگرس کی اسلام پسند رکن توکل کرمان ایک بارپھر خبروں کا موضوع ہیں اور ان کے سخت گیرمذہبی نظریات کے علی الرغم سماجی رابطوں کی ویب سائٹ 'فیس بک' کی طرف سے انہیں عالمی مواد کی مانیٹرنگ کمیٹی میں شامل کرنے پر تنقید کی جار ہی ہے۔

فرانسیسی پارلیمنٹ کی خاتون رکن سینیٹر'نٹالی گولیٹ' نے اخوان المسلمون کی مقرب سمجھی جانے والی توکل کرمان کو اہم عہدے پر تعینات کرنے پر 'فیس بک' کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

دائیٰں بازو کی امریکی رکن کانگرس کی فیس بک کی مانیٹرنگ کمیٹی میں تقرری پر عرب اور بین الاقوامی برادری کی طرف سے سخت تنقید سامنے آئی ہے۔ بعض ممالک نے اس تقرری پر 'فیس بک' کے بائیکاٹ کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

فرانسیسی اخبار 'لی ویگارو' میں شائع ایک مضمون میں فرانسیسی خاتون سینیٹر نے گولیٹ نے اس انتخاب پر اپنے مؤقف اور اعتراض کی وضاحت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ توکل کرمان اخوان المسلمون کے ایجنڈے پر کام کرتی ہے۔ فیس بک نے توکل کرمان کو اہم عہدے پر تعینات کرکے اعتراضات اور تنازعات کا نیا دروازہ کھول دیا ہے۔ فیس بک کو فوری طورپر توکل کرمان کو مانیٹرنگ کمیٹی سے نکالنا چاہیے۔

فرانسیسی سینیٹر برائے سینٹر پارٹی ، یونین آف ڈیموکریٹس اور انڈیپینڈینٹس جنھوں نے فرانس اور یورپ میں انتہا پسند نیٹ ورکس سے بالواسطہ مقابلہ کرنے کے طریقوں کی تحقیقات کرنے والے کمیشن کی سربراہی کر رکھی ہے استفسار کیا کہ کیا نفرت انگیز تقاریر اور انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے والا فرانس اس طرح کے اقدام کو کیسے قبول کرسکتا ہے؟۔

انہوں نے کہا کہ فرانسیسی قانون اپنے آپ میں خطرناک ہے کیوں کہ یہ ایک طرح سے پانچ ٹیکنالوجی کمپنیوں یا کسی اور کو بین الاقوامی انفارمیشن نیٹ ورک پر پولیس کا درجہ دیتا ہے۔

فیس بک کے ذریعہ قائم کردہ کمیٹی کے معاملے کی طرف لوٹتے ہوئے گولیٹ نے اشارہ کیا کہ یہ کمیٹی 20 "آزاد" شخصیات پر مشتمل ہے جو آزادی اظہار اور سلامتی کے مابین توازن کو یقینی بنانے کے ذمہ دار ہوں گے۔ ان میں سابق ڈینش وزیر اعظم ہیلی ٹورننگ - شمٹ ، گارڈین اخبار کے سابق ایڈیٹر ان چیف ایلن راسپرجر اور جج انسانی حقوق کی سابقہ یورپی عدالت ، اندراس ساگو جیسے لوگ شامل ہیں۔ ان میں توکل کرمان کی شمولیت افسوس ناک ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ بالا ناموں کا اعلان امن سے قریب قریب کسی طور پر قابل قبول ہے لیکن توکل کرمان کے نام نے عرب دنیا اور اینگلو سیکسن میڈیا میں ہنگامہ برپا کردیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا توکل کرمان کا کردار کافی متنازع ہے۔ اس کی وجہ اس کی اخوان المسلمون سے ہم آہنگ متعصبانہ مذہبی سوچ ہے۔