.

پرتگال: صدر ڈی سوزا نے قطار میں کھڑے ہو کر 20 منٹ تک انتظار کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پرتگال کے سیاحتی قصبے Cascais کی ایک سپر مارکیٹ میں پیر کے روز خریداری کے لیے آنے والے لوگ اپنے درمیان قطار میں کھڑے ایک شخص کو دیکھ کر ورطہ حیرت میں پڑ گئے۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ قمیض اور شورٹ کے سادہ کپڑوں میں ملبوس اور چہرے پر ماسک لگائی ہوئی شخصیت کوئی اور نہیں بلکہ ملک کے صدر Marcelo Rebelo de Sousa تھے۔ جی ہاں وہ دارالحکومت لشبونہ سے 30 کلو میٹر دور واقع اس قصبے میں مقیم ہیں۔ یورپ کے متعدد بادشاہوں نے اس قصبے میں موسم سرما گزارنے کے لیے اپنے محل بنا رکھے ہیں۔

سپر مارکیٹ کے ایک کارکن نے پرتگال کے صدر کی تصویر کھینچ لی۔ یہ تصویر مقامی اور غیر ملکی ذرائع ابلاغ میں نمودار ہوئی۔ سوشل میڈیا پر لوگوں نے اس تصویر پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پرتگال کے صدر جو روزانہ 4 گھنٹے سے زیادہ نہیں سوتے ،،، انہوں نے کرونا کے سبب پرتگال کے عوام پر عائد قرنطینہ سے نکلتے ہوئے مطلوبہ شرائط کا پورا خیال رکھا۔ وہ سپر مارکیٹ میں دیگر افراد سے تقریبا دو میٹر کے فاصلے پر کھڑے تھے۔ تاہم کسی نے بھی ان کے ساتھ ملک کے صدر والا معاملہ نہیں کیا بلکہ وہ ایک عام گاہک کی طرح 20 منٹ تک اپنی باری کا انتظار کرتے رہے۔ اس کے بعد انہوں نے اپنی خریداری کا بل ادا کیا۔

پرتگال میں ابھی تک کرونا وائرس کے 29243 کیس سامنے آ چکے ہیں۔ ان میں 1247 افراد موت کا شکار ہو چکے ہیں۔