تونس: النہضہ کے ارکان کا راشد الغنوشی سے پارٹی قیادت چھوڑنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

افریقی عرب ملک تونس کی اسلام پسند مذہبی سیاسی جماعت النہضہ کے ارکان نے پارٹی کے سربراہ اور موجودہ پارلیمنٹ کے اسپیکر علامہ راشد الغنوشی سے جماعت کی قیادت سے سبکدوشی کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق النہضہ کی طویل عرصے سے قیادت اپنے ہاتھ میں رکھنے پر جماعت کے دوسرے رہ نمائوں اور عام کارکنوں میں راشد الغنوشی کے خلاف سخت غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔

النہضہ کے اندر سے " اتحاد اورتجديد" کےنام سے ایک نیا گروپ سامنے آیا ہے جس نے مطالبہ کیا ہے کہ النہضہ کی قیادت میں تبدیلی کے لیے رواں سال کے آخڑ تک اجلاس بلایا جائے۔ پارٹی اجلاس میں جماعت کی نئی قیادت کاچنائو عمل میں لانے کے ساتھ ساتھ راشد الغنوشی کو جماعت کی قیادت سے ہٹایا جائے۔

دوسری طرف علامہ راشد الغنوشی النہضہ کی جنرل باڈی کا اجلاس بلانے سے کترا رہے ہیں۔ ان کاکہنا ہے کہ موجودہ حالات پارٹی قیادت میں تبدیلی کے لیے ساز گار نہیں ہیں۔ ملک اس وقت حساس دور سے گذر رہا ہے ایسے میں ان کا پارٹی کی قیادت پر قائم رہنا ضروری ہے۔ پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ راشد الغنوشی ہرصورت میں الہنضہ کی قیادت اپنے ہاتھ میں رکھنا چاہتے ہیں حالانکہ پارٹی کا منشور اور قانون انہیں ایسا کرنے کی اجازت نہیں دیتا۔ سابق چنائو کے تحت الغنوشی کی مدت صدارت رواں ماہ ختم ہوگئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں