.

کرونا وائرس : ایران میں عیدالفطر کے لیے کاروبار اور مذہبی مقامات کھل گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں میں نرمی کردی ہے اور آج ہفتے کے روز سے عید الفطر کے لیے کاروبار ، مذہبی اور ثقافتی مقامات دوبارہ کھولے جارہے ہیں۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے ایک نشری تقریر میں کہا ہے کہ اتوار کو عیدالفطر کے موقع پر عجائب گھر اور تاریخی مقامات کو دوبارہ کھولا جارہا ہے۔مقدس مزارات کو سوموار سے کھول دیا جائے گا۔

صدر روحانی نے گذشتہ اتوار کو یہ اعلان کیا تھا کہ مزارات کو صبح کے اوقات میں اور سہ پہر کے وقت تین، تین گھنٹے کے لیے کھولا جائے گا۔ملک بھر میں تمام ورکر آیندہ ہفتے سے کام پر آجائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے کرونا وائرس کے تعلق سے تین مراحل کو عبور کر لیا ہے۔اب چوتھے مرحلے میں ایران کے31 میں سے 10 صوبوں میں کرونا وائرس پر قابو پایا جائے گا۔ان صوبوں میں صورت حال بہتر ہے اور سکریننگ کا کام تیز کیا جائے گا اور متاثرہ مریضوں کو باقی آبادی سے الگ تھلگ کیا جائے گا۔

صدر روحانی نے یہ بھی کہا تھا کہ رمضان کے بعد ریستوران دوبارہ کھول دیے جائیں گے ،کھیلوں کی سرگرمیاں بحال کردی جائیں گی لیکن میچوں کو دیکھنے کے لیے شائقین کو کھیل کے میدانوں میں آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ جامعات بھی 6 جون سے دوبارہ کھول دی جائیں گی لیکن میڈیکل اسکول بند رہیں گے۔

ان کے مطابق ایران میں کووِڈ-19 سے 88 فی صد اموات ایسے افراد کی ہوئی ہیں جو پہلے بھی مختلف عوارض کا شکار تھے۔

وزارت صحت کے مطابق ایران میں اب تک کرونا وائرس سے سات ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور ایک لاکھ 30 ہزار سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔