.

سعودی عرب میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں کمی، 2235 نئے مریض رجسٹر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں کرونا وائرس کے کیسوں کی یومیہ تعداد میں کمی واقع ہونا شروع ہوگئی ہے اور گذشتہ 24 گھنٹے میں 2235 نئے کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ مملکت میں اب تک کل تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد 74795 ہوگئی ہے۔

سعودی عرب کی وزارت صحت نے 16 مئی کو سب سے زیادہ 2840 کیسوں کی اطلاع دی تھی۔اس کے بعد کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں روزانہ کمی واقع ہورہی ہے۔

سعودی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبدالعالی نے سوموار کو کرونا وائرس کے 2148 مریضوں کے صحت یاب ہونے کی اطلاع دی ہے۔اس طرح اب تک کل متاثرہ مریضوں میں سے 45668 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

ترجمان کے مطابق کرونا وائرس کا شکار نو مریض آج دم توڑ گئے ہیں۔وہ مختلف عوارض میں مبتلا تھے اور کووِڈ-19 کا شکار ہونے کے بعد ان کی حالت بگڑ گئی تھی۔سعودی عرب میں اب تک کرونا وائرس سے 399 اموات ہوئی ہیں۔

نئے تشخیص شدہ کیسوں میں 27 فی صد خواتین اور 73 فی صد مرد حضرات ہیں۔ ترجمان کے مطابق 41 فی صد نئے مریض سعودی شہری ہیں اور 59 فی صد مختلف قومیتوں سے تعلق رکھتے ہیں۔

ڈاکٹر محمد العبد العالی نے ایک مرتبہ پھر لوگوں پر زوردیا ہے کہ وہ سماجی فاصلہ اختیار کرنے سے متعلق حکومت کی رہ نما ہدایات پر عمل درآمد کریں، حفاظتی احتیاطی تدابیر اختیار کریں، چہرے پر ماسک پہنیں اور اجتماعات میں شرکت سے گریز کریں۔

سعودی وزارت داخلہ نے گذشتہ ہفتے پانچ سے زیادہ افراد کے اجتماع پر پابندی عاید کردی تھی اور 23 سے 27 مئی تک عیدالفطر کی تعطیلات کے موقع پر ملک بھر میں مکمل لاک ڈاؤن اور کرفیو عاید کررکھا ہے۔

وزارتِ داخلہ کے اعلامیے کے مطابق شاپنگ مالوں یا دکانوں میں خریداروں اور عملہ کے ارکان کو جمع ہونے کی اجازت نہیں ہے۔وہ مقررہ فاصلے کی حد کی خلاف ورزی کرکے خریداری نہیں کرسکیں گے۔ یعنی شاپنگ مالوں میں گاہکوں کے درمیان دو میٹر کا فاصلہ یقینی بنایا جانا چاہیے۔اس کی خلاف ورزی کے مرتکبین کو جرمانے اور دوسری سزاؤں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے اور تارکینِ وطن کو سعودی عرب سے بے دخل بھی کیا جاسکتا ہے۔