.

بھارت: شوہر نے بیوی کو سانپ سے ڈسوا کر قتل کرڈالا

بیوی کا مہر واپس لینے کے لیے گھنائونی واردات، ملزم گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت میں پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے جس پر الزام ہے کہ اس نے کوبرا سانپ کے ذریعے اپنی بیوی کو دو بار ڈسوا کر قتل کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ جنوبی ریاست کیرالا سے تعلق رکھنے والے سراج نامی ایک شخص نے ایک بار اپنی بیوی کو سانپ سے ڈسوایا مگر وہ اسپتال میں کچھ دیر زیرعلاج رہنے کے بعد بچ گئی تھی۔ شوہر نے دوسری بار اسےسانپ سے ڈسوایا جس کے نتیجے میں اس کی موقت واقع ہو گئی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ سراج نامی شخص کا ایک سپیرے کے ساتھ رابطہ تھا۔ اس کے ٹیلیفونک ریکارڈسے بھی قاتل شوہر اور سپیرے کے درمیان ہونے والی ٹیلیفونک کالوں میں بھی پتا چلتا ہے کہ سراج نے اپنی بیوی کو سانپ سے ڈسوانے کے لیے سپرے کی مدد لی تھی۔ اس کے علاوہ ملزم نے انٹرنیٹ پر سانپ سے ڈسوانے کے کی ویڈٰیوز بھی سرچ کی تھیں۔

مقامی پولیس اہلکار اشوک کمارنے کہا کہ دوماہ قبل 27 سالہ سراج نے اپنی بیوی اوثرا کو سانپ سے ڈسوایا جس کے بعد خواتین کو اسپتال منتقل کیا گیا۔

متاثرہ لڑکی کو اسپتال سے اس کے والدین کے گھر لے جایا گیا جہاں سراج نے ایک بار پھر سپیرے سے لیا سانپ سوئی ہوئی بیوی پر پھینک دیا۔

پولیس عہدیدار نے بتایا کہ سراج نے ایسے ظاہر کیا جیسے کچھ بھی نہیں ہوا۔ اوثرا کی ماں نے دیکھا کہ اس کی بیٹی صبح اٹھی نہیں۔ وہ اسے جگانے کے لیے گئی تو ماں کی چیخ نکل گئی۔ اوثرا کو اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اس کی وفات کی تصدیق کردی۔

اوثرا کےوالدین نے بتایا بیٹی کی وفات کے بعد سراج نے اس کا سامان حاصل کرنے کی کوشش کی۔ اوثرا کے والدین امیر گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ سراج بنک میں معمولی ملازم ہے تاہم اس کی مادی حالت اتنی اچھی نہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ سراج نے حق مہر میں اوثرا کو سونے کے ایک سو سکے، ایک نئی گاڑی اور پانچ لاکھ روپے نقد ادا کیے تھے۔ سراج نے تفتیش کے دوران بتایا کہ اس نے بیوی کو دیا حق مہر واپس لینے کے لیے یہ خطرناک کھیل کھیلا۔ اسے ڈر تھا کہ اگر وہ بیوی کو طلاق دیتا ہے کہ بیوی مہر بھی لے جائے گی۔