.

سعودی عرب سے ’’عودہ‘‘ کے ذریعے 12798 تارکین وطن کی آبائی ممالک کو واپسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے ’’عودہ‘‘ اقدام کے تحت 12798 تارکینِ وطن کو خصوصی طیاروں کے ذریعے ان کے آبائی ممالک کو واپس بھیج دیا ہے۔

سعودی عرب کی وزارت برائے خارجہ امور نے اپریل میں کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد مملکت میں پھنس کر رہ جانے والے تارکین وطن کی واپسی کے لیے ''عودہ'' اقدام کا آغاز کیا تھا۔اس کا مقصد اپنے آبائی ممالک کو لوٹنے کے خواہاں تارکین وطن کی واپسی ہے۔اس کے تحت سعودی عرب میں مقیم غیرملکی تارکین وطن کو ان کے آبائی ممالک میں واپس بھیجنے کے عمل میں مدد کی جارہی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق 22 اپریل سے 3 جون تک 178452 افراد نے عودہ اقدام کے تحت اپنے ناموں کا اندراج کرایا ہے۔ان میں خروج اور دوبارہ داخلے کا ویزا رکھنے والے مکین ،حتمی خروج اور سیروسیاحت کے ویزوں کے حاملین شامل ہیں۔

سعودی عرب میں مقیم تارکین وطن اپنے آبائی ممالک کو لوٹنے کے خواہاں ہیں تو وہ ابشر پلیٹ فارم پر اپنے ناموں کا اندراج کرسکتے ہیں۔وہ اس پر اپنے اقامتی نمبر ، تاریخ پیدائش ، موبائل نمبر ، روانگی کے شہر اور اپنے آبائی ملک میں جائے منزل ہوائی اڈے کے نام کا اندراج کریں گے۔

سعودی وزارت خارجہ غیرملکی تارکین وطن کی ان کے آبائی ممالک کو واپسی کے لیے وزارت حج اور عمرہ ، وزارت برائے انسانی وسائل اور ترقی ،سول ایوی ایشن اتھارٹی اور دوسرے سرکاری اداروں کے ساتھ مل کر کام کررہی ہے۔

سعودی وزارتِ داخلہ کے ایک بیان کے مطابق اگر تارکین وطن اپنے آبائی ممالک کو لوٹنا چاہتے ہیں اور ان کے پاس کارآمد ویزے ہیں تو وہ اس سہولت سے استفادہ کرسکتے ہیں۔وزارت داخلہ کے مطابق سعودی عرب سے روانگی اور واپسی یا حتمی طورپر اپنے ملکوں کو لوٹنے والے افراد آن لائن برقی پلیٹ فارم ابشر پر درخواست دے سکتے ہیں۔ وزارت داخلہ نے یہ سروس 22 اپریل کو شروع کی تھی۔اس کا ویب ایڈریس یہ ہے:
www.absher.sa

ابشر کے ذریعے دی گئی درخواست منظور ہونے کی صورت میں درخواست گزار کو ایک ایس ایم ایس بھیجا جاتا ہے۔اس میں پرواز کا وقت ، ٹکٹ نمبر اور بُکنگ کی تفصیل درج ہوتی ہے۔اس کے بعد درخواست گزار اپنا ٹکٹ حاصل کرسکتا ہے اور اس کے مطابق اپنے سفر کا انتظام کرسکتا ہے۔

تاہم کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کے شاہ خالد بین الاقوامی ہوائی اڈے ، جدہ کے شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی ہوائی اڈے ، مدینہ منورہ کے شہزادہ محمد بن عبدالعزیز بین الاقوامی ہوائی اڈے اور الدمام کے شاہ فہد بین الاقوامی ہوائی اڈے سے ہی بین الاقوامی پروازیں چلائی جارہی ہیں اور ان ہوائی اڈوں ہی سے غیرملکی تارکین وطن اپنے آبائی ممالک کو جاسکتے ہیں۔

سعودی عرب نے کرونا وائرس کی وَبا پھیلنے کے بعد بیرون ملک مقیم یا پھنس کر رہ جانے والے اپنے شہریوں کو واپس لانے کے لیے بھی خصوصی پروازیں چلائی ہیں اور امریکا ، برطانیہ ، بحرین، سوڈان ، تُونس اور انڈونیشیا سمیت بہت سے ممالک سے سعودی شہریوں کو ان پروازوں کے ذریعے واپس لایا گیا ہے۔