.

کرونا وائرس: سعودی عرب میں ایک دن میں 32 اموات ، 1975 نئے کیسوں کی تشخیص

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں گذشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کے 32 مریض وفات پا گئے ہیں اور 1975 نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے۔

سعودی عرب کی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے جمعرات کے روز بتایا ہے کہ مملکت میں کووِڈ-19 سے ہلاکتوں کی تعداد 611 ہوگئی ہے اور کل تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد 93157 ہوگئی ہے۔

گذشتہ 24 گھنٹے میں دارالحکومت الریاض میں کرونا وائرس کے سب سے زیادہ کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ان کی تعداد 675 ہے۔اس کے بعد مکہ مکرمہ میں 286 نئے مریضوں کی تشخیص ہوئی ہے۔ساحلی شہر جدہ میں 259، مدینہ منورہ میں 124 اور الہفوف میں 112 نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔باقی کیسوں کا دوسرے شہروں اور علاقوں میں اندراج کیا گیا ہے۔

ترجمان نے بتایا ہے کہ کووِڈ-19 کا شکار مزید 806 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں۔اس طرح اب سعودی عرب میں صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 68975 ہوگئی ہے۔

سعودی عرب نے حالیہ دنوں میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں میں نرمی کرنا شروع کردی ہے اور اب شہریوں اور مکینوں کو اندرون ملک نقل وحرکت اور صوبوں کے درمیان سفر کی اجازت دے دی ہے۔اندرون ملک بڑے شہروں کے درمیان فضائی پروازیں بھی بحال کردی گئی ہیں۔

سعودی وزارت داخلہ نے تھوک اور پرچوں کی دکانوں ، خریداری مراکز اور مالوں کو کھولنے کی اجازت دے دی ہے لیکن شرط یہ عاید کی ہے کہ ان خریداری مراکز میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے پیشگی حفاظتی تدابیرپر عمل درآمد کیا جائے گا۔

سعودی وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے اسی ہفتے تمام شہریوں اور مکینوں پر زوردیا ہے کہ وہ کرونا وائرس سے بچنے کے لیے ماسک پہن کر رکھیں اور باہمی میل جول میں سماجی فاصلہ اختیار کریں۔

انھوں نے کہا:''کووِڈ-19 کی ایک فرد سے دوسرے فرد میں منتقلی کو نمایاں طور پر روکا جاسکتا ہے لیکن اس کی شرط یہ ہے کہ ہر کوئی گھر سے باہر نکلتے وقت ماسک پہن کر رکھے۔ہم آپ پر زوردیتے ہیں کہ آپ صحت مندانہ پیشگی حفاظتی تدابیر اختیار کریں اور آپ ان لوگوں کو بھی یہ بات باور کرائیں جو ان پابندیوں کی پاسداری نہیں کررہے ہیں۔''