.

سعودی عرب:مسلسل دوسرے روز کرونا وائرس کے 37 سو سے زیادہ کیس ریکارڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں جمعرات کو مسلسل دوسرے روز کرونا وائرس کے 37 سے زیادہ نئے کیسوں کی تصدیق ہوئی ہے۔اب تک مملکت میں ایک دن میں ریکارڈ کیے جانے والے یہ (3733) سب سے زیادہ کیس ہیں اور کل تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد 116021 ہوگئی ہے۔

سعودی وزارت صحت کے مطابق نئے تشخیص شدہ کیسوں میں 40 فی صد کا تعلق دارالحکومت الریاض سے ہے۔شہر میں حالیہ ہفتوں کے دوران میں کووِڈ-19 کے سب سے زیادہ کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔

وزارتِ صحت کے مطابق کرونا وائرس کا شکار مزید 38 افراد دم توڑ گئے ہیں اور اب مہلوکین کی تعداد 857 ہوگئی ہے۔نیزگذشتہ 24 گھنٹے میں کووِڈ-19 کے مرض میں مبتلا 2065 افراد صحت یاب ہوگئے ہیں۔

وزارتِ صحت کے مطابق سعودی عرب میں کرونا وائرس کا شکار ہونے والے قریباً 70 فی صد مریض 11 جون تک صحت یاب ہوچکے ہیں۔

وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبدالعالی نے منگل کو ایک نیوز بریفنگ میں خبردار کیا تھا کہ لوگوں نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے پیشگی حفاظتی اور احتیاطی تدابیر کو نظرانداز کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہواہے جس کی وجہ سے مملکت میں کووِڈ-19 کے فعال کیسوں کی تعداد اور اموات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔

انھوں نے شہریوں اور مکینوں پر زوردیا تھا کہ وہ سماجی فاصلے کے ضابطے اور پیشگی حفاظتی احتیاطی تدابیر کی پاسداری کریں۔ان کے بہ قول سعودی عرب میں کووِڈ-19 کے 40 فی صد کیس وزارتِ صحت کی رہ نما ہدایات کی پاسداری نہ کرنے کا نتیجہ ہیں۔

سعودی حکومت نے حالیہ دنوں میں ملک بھر میں کرونا وائرس کے تعلق سے عاید کردہ پابندیوں میں بتدریج نرمی کردی ہے۔مملکت بھر میں مساجد کو نمازِ جمعہ کے لیے کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے لیکن حکومت نے اس کی شرط یہ عاید کی ہے کہ انھیں نماز جمعہ کے آغاز سے صرف 40 منٹ قبل کھولا جانا چاہیے۔

ملک بھر میں 31 مئی سے سرکاری شعبے کے ملازمین نے بھی اپنے دفاتر یا کام کی جگہوں پر بتدریج لوٹنا شروع کردیا ہے اور توقع ہے کہ 14 جون تک سرکاری دفاتر میں ان کی حاضری مکمل ہوجائے گی۔