.

ایردوآن کا مقرب لیڈرجیل میں قید اپوزیشن رہ نما کی اہلیہ کی ہراسانی کا مرتکب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے ذرائع ابلاغ میں ان دنوں صدر طیب ایردوآن کے ایک مقرب لیڈر اور حکمراں جماعت (آق) کے سینیر رکن کو ایک اپوزیشن کی اہلیہ کی ہراسانی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ترکی کی حکمراں جماعت کے اس لیڈر کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی۔ اس پر الزام ہے اس نے سنہ 2016ء سے گرفتار حزب اختلاف کےرہ نما صلاح الدین دمیرتاش کی اہلیہ سے جنسی ہراسانی پرمبنی نا مناسب الفاظ استعمال کیے تھے۔

حکمران جماعت آق کے ایک رکن وداد مطیع نے سوشل میڈیا پر اس واقعے کی تفصیل بیان کرنے کے ساتھ جیل میں قید صلاح الدین باشاق دمیر تاش اور اس کی اہلیہ باشاک دمیرتاش کی تصاویربھی شیئرکیں۔

اس پر عوامی حقلوں کی طرف سے سخت رد عمل سامنے آیا۔ سوشل میڈیا پر جاری بحث میں ترک وزیر انصاف عبدالحمید گل نے کہا ہے کہ ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور اس کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

ادھر ترکی کے ساکاریا شہر کے پراسیکیوٹر جنرل کا کہنا ہے کہ اس نے ملزم کی شںاخت کرلی ہے۔

واضح رہے کہ صلاح الدین دمیرتاش کردوں کی حامی پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے بانی اور سنہ 2016ء سے قید ہیں۔ ان پر کردوں کی مسلح تحریک کی حمایت کے الزام میں دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمات چلائے جا رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں