.

فرانسیسی عدالت سے بیوی کے قاتل ترک شوہر کو 25 سال قید کی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کی ایک عدالت نے 39 سالہ ترک شہری کو اپنی بیوی کو سر عام چاقو کےوار کرکے ہلاک کرنے کا جرم ثابت ہونے پرپچیس سال قید کی سزا سنائی ہے۔ ملزم نے سنہ 2017ء کو اپنی بیوی کو فرانس میں اس وقت چاقو کے حملے میں ہلاک کردیا تھا جب اس اس نے شوہر سے طلاق کا مطالبہ کیا تھا۔

وسطی فرانس کے لوار شہر میں فوجداری عدالت کے سامنے تین روزہ مقدمے کی سماعت کے بعد جیوری نے سرکاری وکیل مارکو اسکاٹچیمارا کی درخواستوں پر عمل کرتے ہوئے ملزم کوپچیس سال قید کی سزا کا حکم دیا اس کے ساتھ ساتھ چھ سے تیرہ سال کی عمر کے چار بچوں کی کفالت کی ذمہ داری بھی عاید کی گئی ہے۔

ملزم کی شناخت ایوب قنطار کے نام سے کی گئی ہے۔ اس نے اپنی بیوی 34 سالہ ہولیا کو قتل کرنے کے علاوہ اہلیہ کے دوست کو بھی جان سے مارنے کی کوشش کی تھی۔ قنطار نے 12 اور 13 اگست 2017ء کی رات زبردستی گھر میں داخل ہونے کے بعد بیوی کےآشنا پر 15 بارچاقو سے وارکیا۔

اسے شدید زخمی کرنے کے بعد وہ اپنی بیوی کا تعاقب کرنے نکلا جو گھر سے فرار ہوگئی۔

گلی کے وسط میں عینی شاہدین کے سامنے اس نے اسے اپنے بالوں سے پکڑ لیا اور 27 بار اس پر چاقوکے وار کیے جو جان لیوا ثابت ہوئے۔