.

کرونا وائرس: سعودی عرب کا 4 ارب ڈالرسے سیاحتی ترقیاتی فنڈ شروع کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے چار ارب ڈالر کی مالیت سے ایک سیاحتی ترقیاتی فنڈ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

سعودی وزارتِ سیاحت کے اعلان کے مطابق یہ فنڈ کرونا وائرس کی وَبا اور عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے پیش نظر ملکی معیشت کو متنوع بنانے کے منصوبے کا حصہ ہے۔

وزارت کے ایک بیان کے مطابق اس سیاحتی ترقیاتی فنڈ کے ذریعے نجی شعبے اور سرمایہ کار بنکوں کے ساتھ مل کر مملکت میں سیاحت کے شعبے کو ترقی دی جائے گی۔

واضح رہے کہ سعودی عرب ویژن 2030 کے تحت تیل کی آمدن پر انحصار کم کرنے کے لیے جن شعبوں کو ترقی دے رہا ہے،ان میں سیاحت کا شعبہ سرفہرست ہے اور اس کو ترقی دینے کے بہت سے مواقع موجود ہیں۔

سعودی حکام موسم گرما میں لوگوں کو سیاحتی مقامات کی سیر کرانے کا ایک منصوبہ بھی ترتیب دے رہے ہیں۔اس کے تحت کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں کی پاسداری کرتے ہوئے لوگوں کو مختلف تاریخی مقامات کی سیر کے لیے لے جایا جائے گا۔

سعودی عرب نے گذشتہ سال بین الاقوامی سیاحوں کے لیے نئے ویزوں کا اجرا کیا تھا اور غیرملکی کمپنیوں کو سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری کے لیے مختلف ترغیبات اور مراعات دینے کا اعلان کیا تھا۔ سعودی عرب کو توقع ہے کہ 2030ء تک سیاحت کے شعبے کا مجموعی قومی پیداوار میں حصہ 10 فی صد ہوجائے گا۔اس وقت اس کا حصہ تین فی صد ہے۔

اس وقت معاشی تجزیہ کار یہ پیشین گوئی کررہے ہیں کہ کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے اقدامات اور عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں گراوٹ کے پیش نظر سعودی معیشت اس سال دباؤ کا شکار رہے گی اور اس کا بجٹ خسارہ بڑھ سکتا ہے۔اس لیے اس کو آمدن کے مزید ذرائع پیدا کرنا ہوں گے۔