.

لیبیا میں فوری فائر بندی اور مذاکرات کے دوبارہ آغاز کو یقینی بنایا جائے : واشنگٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی قومی سلامتی کونسل نے لیبیا میں فائر بندی اور کسی بھی جانب سے عسکری جارحیت روکے جانے پر زور دیا ہے۔ ساتھ ہی فوری طور پر مذاکرات کے دوبارہ آغاز کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے۔

پیر کے روز کونسل کے سرکاری اکاؤنٹ سے جاری ٹویٹ میں کہا گیا کہ "لیبیا میں 5+5 بات چیت، قاہرہ معاہدے اور برلن کانفرنس کی راہ کی بنیادوں پر سیاسی عمل استوار کیا جائے"۔

مزید یہ کہ "ہم لیبیا میں کسی بھی فریق کی جانب سے عسکری جارحیت کی مخالفت کرتے ہیں"۔

ادھر عرب لیگ نے اتوار کی شام ایک اعلان میں بتایا کہ مصر کی درخواست پر عرب لیگ کا وزراء خارجہ کی سطح پر ایک اہم اجلاس انٹرنیٹ کے ذریعے منگل کے روز منعقد ہو گا۔ اجلاس میں لیبیا کی صورت حال اور ایتھوپیا کا معاملہ زیر بحث آئے گا۔

عرب لیگ کے جنرل سکریٹریٹ کے ذمے دار ذرائع کے مطابق مذکورہ اجلاس لیبیا میں اقوام متحدہ کے سپورٹ مشن کی رابطہ کاری کے ساتھ منعقد ہو گا۔ اجلاس اُن عالمی کوششوں کے زیر سایہ ہو رہا ہے جن کا مقصد لیبیا کے فریقوں کے بیچ مربوط سیاسی عمل کا دوبارہ آغاز ہے۔ اس طرح لیبیا میں سیکورٹی، سیاسی اور اقتصادی تناظر میں ایک مربوط اور جامع تصفیے کو یقینی بنایا جا سکے۔