امریکا کی وینزویلا کو تیل مہیا کرنے والے پانچ ایرانی جہازوں کے کپتانوں پر پابندیاں عاید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا نے ایران کے پانچ بحری جہازوں کے کپتانوں پر پابندیاں عاید کردی ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے مطابق ان ایرانی کپتانوں پر وینزویلا کے صدر مادورو کی غیر قانونی حکومت کو 15 لاکھ بیرل تیل مہیا کرنے کا الزام ہے۔

انھوں نے بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ '' ان ایرانی کپتانوں کے اثاثے منجمد کر لیے جائیں گے اور وہ امریکا کے پانیوں میں جہاز نہیں چلا سکیں گے۔''

اسی ماہ کے اوائل ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب کے قریب ایک خبررساں ایجنسی نے یہ اطلاع دی تھی کہ اگر امریکی فوج وینزویلا کو جانے والے ایران کے تیل بردار جہازوں کی راہ میں رخنہ ڈالتی تو ایرانی بحری فورسز خلیج میں امریکا کے بحری جہازوں کو نشانہ بنانے کے لیے تیار تھیں۔

ایران نے پانچ تیل بردار ٹینکروں پر مشتمل ایک قافلہ وینزویلا کو بھیجا تھا۔اس نے یہ بھی کہا تھا کہ اگر کیراکس مزید درخواست کرتا ہے تو اس کو مزید تیل سے لدے ٹینکر بھیجے جائیں گے۔

نور نیوز نے اپنی ویب سائٹ پر یہ اطلاع دی تھی کہ ’’وینزویلا کی طرف جانے والے ایرانی جہازوں کے خلاف بڑھتی ہوئی فوجی دھمکیوں کے بعد ایران کی مسلح افواج کو خلیج فارس اور خلیج عُمان میں امریکا کے تجارتی بحری جہازوں کی شناخت اور ان کا پیچھا کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔‘‘

اس کی اطلاع کے مطابق ’’ جوابی ردعمل کی نشان دہی کر لی گئی تھی اور ممکنہ کارروائی کے لیے نگرانی بھی کر لی گئی تھی۔‘‘

ایران نے گذشتہ ماہ امریکا کی دھمکیوں سے متعلق اقوام متحدہ کو بھی شکایت کی تھی۔تہران میں امریکی مفادات کی نمایندگی کرنے والے سوئس سفیر کو طلب کیا تھا اور انھیں امریکا کے ایرانی ٹینکروں کے خلاف ممکنہ اقدامات کے بارے میں تشویش سے آگاہ کردیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں