.

کوسوو نے حزب اللہ کے سیاسی اورعسکری ونگ کو دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جمہوریہ کوسوو نے ایران کی حمایت یافتہ لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے سیاسی اور عسکری ونگ دونوں کو دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔

کوسوو کے وزیراعظم عبداللہ ہوتی نے جمعرات کو ٹویٹر پر بہ ذات خود حزب اللہ کو دہشت گرد قرار دینے کا اعلان کیا ہے۔انھوں نے اپنے ذاتی ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھا ہے:’’ کوسوو کی حکومت دنیا میں امن وسلامتی کے لیے عالمی اقدامات کی حمایت کرتی ہے۔چناں چہ آج ہم نے اتفاق رائے سے حزب اللہ تنظیم ،اس کی سیاسی اور عسکری شاخوں کو جمہوریہ کوسوو کی سرزمین پر ایک دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا فیصلہ کیا ہے۔‘‘

کوسوو کی وزیرخارجہ میلیزا حرادیناج نے بھی ایک ٹویٹ میں حکومت کے اس فیصلے کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ ’’ یہ فیصلہ قومی ، علاقائی اور عالمی سلامتی کے مفادات کے تحفظ اور انھیں آگے بڑھانے میں اپنا کردار ادا کرے گا۔‘‘

واضح رہے کہ جمہوریہ کوسوو نے 2019ء میں حزب اللہ کے عسکری ونگ کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا تھا لیکن اس کے سیاسی ونگ کو اس فیصلے میں شامل نہیں کیا تھا۔

جرمنی نے اپریل میں حزب اللہ کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا تھا اور اپنی سرزمین پر اس کی سرگرمیوں پر پابندی عاید کردی تھی۔

اس سے پہلے جولائی 2019 ء میں ارجنٹینا نے حزب اللہ کو دہشت گرد گروپ قرار دے دیا تھا اور ملک میں اس کے اثاثے منجمد کرلیے تھے۔ ارجنٹیا کے حکام نے حزب اللہ پر اپنی سرزمین پر دہشت گردی کے دو حملوں میں ملوّث ہونے کا الزام عاید کیا تھا۔

یورپی یونین نے بھی حزب اللہ کے عسکری ونگ کو دہشت گرد گروپ قرار دے رکھا ہے لیکن اس کے سیاسی ونگ کو اپنی بلیک لسٹ میں شامل نہیں کیا ہے۔