امریکا نے مزید 8 ایرانی کمپنیاں بلیک لسٹ کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایران پر اقتصادی دبائو ڈالنے کی پالیسی کے تحت امریکا نے کل جمعرات کے روز ایران کی مزید آٹھ کمپنیوں کو بلیک لسٹ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

امریکی وزارت خزانہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران کی جن کمپنیوں کو پابندیوں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہےان میں زیادہ تر لوہے اور دھاتوں کی تیاری میں کام کرتی ہیں۔

وزارت خزانہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران کی چار بڑی کمپنیوں کو بلیک لسٹ کیا گیا ہے۔ یہ کمپنیاں لوہے، اسٹیل اور المونیم اشیا کی تیار کرتی ہیں۔ان میں ایران کی سب سے بڑی اسٹیل کمپنی Mobarakeh Steel Company بھی شامل ہے۔

خیال رہے کہ ایران کی مبارکہ کمپنی سنہ 2018ء میں امریکا میں بلیک لسٹ کی گئی تھی۔ Bonyad Taavon Basij کی ملکیتی کمپنی کے پاسداران انقلاب کے ساتھ گہرے تعلقات ہیں۔

سات دوسرے ممالک نے بھی اکتوبر 2019ء کو ایران کی مبارکہ کمپنی کو دہشت گرد نیٹ ورک کی مدد کے الزام میں بلیک لسٹ کیا تھا۔

امریکی وزیر خزانہ اسٹیفن منوچن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایرانی رجیم منافع بخش ادارں سے حاصل ہونے والی آمدن کو خطے اور پوری دنیا میں عدم استحکام پھیلانے اور اپنے وفاداروں کو مضبوط کرنے کے لیے استعمال کررہا ہے۔ اس میدان میں ایران میں دھات سازی کے لیے کام کرنے والی کمپنیاں بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں