.

ترکی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر گہری تشویش ہے: یورپی یونین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی یونین نے انتہائی سخت لہجے میں ترکی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ہفتے کی صبح جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ترکی میں انسانی حقوق کے کارکنان کے خلاف عدالتی کارروائی اس بات کی تصدیق کرتی ہے کہ ملک میں بنیادی آزادی میں کمی واقع ہوئی ہے۔ یورپی یونین نے زور دیا کہ ترکی کے ساتھ تعلقات میں بنیادی آزادی کا احترام اور قانون کی بالا دستی اہم عوامل ہیں۔

ترکی کی عدلیہ نے ملک میں ایمنیسٹی انٹرنیشنل کے دو سابق ذمے داران کے خلاف جیل کی سزا کا فیصلہ سنایا تھا۔ دونوں افراد پر دہشت گردی سے متعلق امور کے حوالے سے الزامات تھے۔

ترکی میں ایمنیسٹی انٹرنیشنل کے سابق سربراہ تانیر قلیچ کو ایک دہشت گرد گروپ سے تعلق کے الزام میں 6 سال اور 3 ماہ قید کی سزا سنائی گئی۔ مزید برآں ترکی میں ایمنیسٹی کی سابق خاتون ڈائریکٹر ایڈل ایسار کے خلاف 2 سال اور ایک ماہ قید کی سزا کا فیصلہ جاری ہوا۔ ان پر ایک دہشت گرد تنظیم کی مدد کا الزام تھا۔

علاوہ ازیں سات ملزمان کو بری کر دیا گیا جن میں ایک جرمن اور ایک سویڈش شہری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں