.

3 ماہ کے لاک ڈاؤن کے بعد برطانیہ کی تمام مساجد نمازیوں کے لیے کھل گئیں

مساجد میں محدود تعداد کے ساتھ نماز کی اجازت، نمازجمعہ کے بڑے اجتماع تاحال ممنوع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ میں 3 ماہ کے لاک ڈاؤن کے بعد تمام مساجد نمازیوں کے لیے کھول دی گئی ہیں۔

برطانوی حکومت نے مساجد میں محدود تعداد کے ساتھ نماز کی اجازت دی ہے جبکہ نماز جمعہ کے بڑی اجتماعات پر پابندی برقرار رہے گی۔ مساجد انتظامیہ بخار کی جانچ، ہینڈ سینی ٹائرز اور ماسک یقینی بنانے کی پابند ہو گی۔ اس کے علاوہ برطانیہ میں دیگر عبادت گاہیں، ریسٹورنٹ اور حجام کی دکانیں مروجہ طریق کار کے تحت کھول دی گئی ہیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کی حکومت نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے مساجد میں محدود نمازیوں کو نماز ادا کرنے کی اجازت دی تھی۔ کرونا وبا کے باعث متحدہ عرب امارات نے مکمل لاک ڈاؤن پالیسی اپناتے ہوئے تمام مساجد میں نماز ادا کرنے پر پابندی لگا دی تھی تاہم اب نمازی گھروں کی بجائے مکمل ایس او پیز کی پیروی کرتے ہوئے مساجد میں نماز ادا کریں گے۔

متحدہ عرب امارات نے مساجد کے لیے ایس او پیز جاری کرتے ہوئے واضح کیا کہ مسجد کی کل گنجائش کا تیس فیصد نمازیوں سے پر کرنے کی اجازت دی ہے۔اس کی خلاف ورزی کے مرتکبین کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

یہ بھی واضح کیا گیا کہ بزرگ افراد اور 12سال سے کم عمر بچے اور ایسے افراد جنہیں سانس کی بیماریاں ہیں، ان کے مساجد میں داخلے پر پابندی برقرار رہے گی۔