.

برازیلی صدر بولسونارو پابندیوں کی مسلسل خلاف ورزیوں کے بعد خود کووِڈ-19 کا شکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برازیل کے صدر جائر بولسونارو کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں اور انھوں نے خود منگل کے روز ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں کہا ہے کہ ان کا کووِڈ-19 کے ٹیسٹ کا نتیجہ مثبت آیا ہے۔

برازیل کے دائیں بازو سے تعلق رکھنے والے صدر بولسونارو دارالحکومت برازیلیہ میں متعدد مرتبہ کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں کی خلاف ورزی کرتےپائے گئے ہیں اور 23 جون کو ایک وفاقی جج نے انھیں عوام سے میل ملاقات کے وقت چہرے پر ماسک پہننے کا حکم دیا تھا۔

ان کے خلاف یہ مقدمہ ایک وکیل نے دائر کیا تھا اور انھوں نے اپنی درخواست میں یہ موقف اختیار کیا تھا کہ صدر سےان کے غیر ذمے دارانہ کردار پر بازپرس کی جائے اور ان کا مواخذہ کیا جائے۔

برازیلیہ میں اپریل سے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عوامی مقامات پر چہرے پر ماسک پہننے کی پابندی عاید ہے۔

صدر بولسونارو متعدد مرتبہ سماجی فاصلے کے ضابطے کو توڑتے پائے گئے ہیں، وہ اپنے حامیوں کی ریلیوں میں کسی ماسک کے بغیر لوگوں سے مصافحہ اور معانقہ کرتے رہے ہیں،باربی کیو پارٹیوں کی میزبانی کرتے رہے ہیں اور شکار کے لیے جاتے رہے ہیں۔

صدر کے علاوہ ان کےمصاحبین بھی کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں کی خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں۔ان کے سابق وزیر تعلیم ابراہام وائنتراب کو گذشتہ ہفتے صدر بولسونارو کے حق میں برازیلیہ میں نکالی گئی ایک ریلی میں بغیر ماسک شرکت پر دوہزار برازیلی رئیل جرمانہ عاید کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ برازیل میں امریکا کے بعد دنیا بھر میں کووِڈ-19 سے سب سے زیادہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں